ظہیر الاسلام بتائیں وہ دھرنے کے پیچھے تھے یا نہیں ؟شاہد خاقان عباسی

ظہیر الاسلام بتائیں وہ دھرنے کے پیچھے تھے یا نہیں ؟شاہد خاقان عباسی
ظہیر الاسلام بتائیں وہ دھرنے کے پیچھے تھے یا نہیں ؟شاہد خاقان عباسی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور (ویب ڈیسک) وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ نواز شریف نے جو پریس کانفرنس کی ہے یہ بیان انہوں نے احتساب عدالت میں دیا ہے یہ بات نئی نہیں ، اسی لئے ہم پہلے دن سے کہہ رہے ہیں کہ ملک میں ایک سچائی کمیشن بنانے کی ضرورت ہے جو ان تمام واقعات کا جائزہ لے، ظہیر الاسلام بتائیں وہ دھرنے کے پیچھے تھے یا نہیں۔

ٹی وی انٹرویو میں وزیر اعظم نے کہا کہ اس حکومت کا آخری ہفتہ ہے اگلی حکومت میں اتفاق رائے پیدا کرکے ایک قومی کمیشن بنایا جاسکتا ہے  جس میں تمام ادارے شامل ہوں اور فیصلہ کریں کہ ماضی میں ہونے والے ماورائے آئین و قانون اقدامات کے حقائق عوام کے سامنے لائے جائیں اور عوام اس بارے میں خود فیصلہ کریں۔ وزیر اعظم کا کہنا تھا  کہ دھرنے سے متعلق نواز شریف کے سوال کا جواب جنرل ظہیرالاسلام ہی دے سکتے ہیں ،اگر دھرنے کے پیچھے جنرل ظہیرالاسلام تھے تو ان کو جواب دہ ہونا پڑے گا، جنرل (ر)ظہیر بتائیں کہ وہ تھے یا نہیں ، ابھی تک یہ پتہ نہیں چلا کہ لیاقت علی خان کو گولی کس نے اور کیوں ماری تھی ؟ہم نے اس حوالے سے کام بھی کیا ہے لیکن یہ کمیشن کے قیام کا موزوں وقت نہیں ۔

انہوں نے کہا کہ ہر ادارے کو آئین کے اندر رہ کر کام کرنا چاہئے ، ذوالفقار بھٹو بھی اسٹیبلشمنٹ کے منظور نظر تھے جنھوں نے یحیٰ خان کے ساتھ مل کر ملک تڑوا دیاہم ماضی کی غلطیوں کو دہراتے رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ جوڈیشل ایکٹو ازم اور نیب نے ملک کے نظام کو مفلوج کردیا ہے کیا یہ ملک کا نقصان نہیں ہے ؟۔چیف جسٹس سے ملاقات میں اپنے خدشات بتائے تھے۔آج بھی کہتا ہوں نیب کے رویہ سے ملک کا بہت نقصان ہورہا ہے اورحکومت مفلوج ہورہی ہے۔نواز شریف کے ساتھ انصاف ہوتا نظر نہیں آرہاان کے بیٹے نے کہا ان کے اپارٹمنٹس ہیں اس کو بلا کر پوچھ لیں ان پر ہمارا قانون لاگو نہیں ہوتا۔نواز شریف کو تول لیا ہے باقی کو بھی تول لیں۔الیکشن وقت پر ہوں گے ،مجھے کوئی خدشہ نہیں ہے لیکن جو کرے گا وہ خود بھگتے گا۔ن لیگ سے جس نے جانا ہے جائے ہم نے کسی کو جیل میں بندنہیں کیامیں ان کے فیصلے کا احترام کرتا ہوں۔ ہماری پارٹی کے پاس ہر حلقے میں مضبوط امیدوار ہیں ،دس بارہ چلے گئے دس بارہ اور چلے گئے تو کوئی فرق نہیں پڑے گا۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد