فاٹا کے خیبر پختونخوا میں انضمام کے بل کو الیکشن کی تاخیر کا ذریعہ نہ بنایا جائے:وزیراعظم شاہد خاقان عباسی

فاٹا کے خیبر پختونخوا میں انضمام کے بل کو الیکشن کی تاخیر کا ذریعہ نہ بنایا ...
فاٹا کے خیبر پختونخوا میں انضمام کے بل کو الیکشن کی تاخیر کا ذریعہ نہ بنایا جائے:وزیراعظم شاہد خاقان عباسی

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ فاٹا کے خیبر پختونخوا میں انضمام کے بل کو الیکشن کی تاخیر کا ذریعہ نہ بنایا جائے، پاکستان الیکشن میں تاخیر کامتحمل نہیں ہوسکتا اور اس بل کی وجہ سے الیکشن تاخیر کرنے کی کوشش نہ کی جائے اس پر تمام جماعتوں نے اتفاق کیاہے۔

قومی اسمبلی میں خطاب کے دوران وزیراعظم نے کہاکہ ایوان نے جو فاٹا کے خیبر پختونخوا میں اضمام کا بل پاس کیا ہے اس کے نتائج پاکستان کے لیے بڑے مثبت ثابت ہوں گے اور میں اپوزیشن کا مشکور ہوں کہ بل پاس ہونے میں ہمارا ساتھ دیا۔انہوں نے مزید کہا کہ بل پاس ہونے پر کا فی پیچیدہ مسائل تھے لیکن خوش اسلوبی سے تمام معاملات طے پائے، حکومت اور اپوزیشن بینچوں نے مل کر اس بل کو پاس کیا جس سے قومی اتفاق رائے قائم ہوا۔ان کا کہنا تھا کہ جو ابھی تقریر ہوئی اس میں ایسی باتوں کا ذکر کیا گیا جن کی آج ضرورت نہیں تھی،آج ایسی بات نہیں کرنی چاہیے تھی جس سے نفرت کا پہلو سامنے آئے جبکہ کسی کو منی لانڈرر کہنا اخلاق کے تقاضوں کے مطابق نہیں اور خاص طورپر اس دن جب اس ہاوس نے یکجہتی کا مظاہرہ کیا اور ایک ایشو حل کیا۔

وزیر اعظم شاہد خاقان نے بتایا کہ ایسے دن کوئی بات کرنا کہ جس سے کسی کے جذبات مجروح ہوں اس کی ضرورت نہیں تھی تاہم یہ فیصلہ پاکستان کے عوام جولائی میں کروں گے جبکہ حکومت 31 مئی تک قائم رہے گی اور 60دن کے اندر الیکشن ہوں گے۔انہوں نے بتایا کہ آج کا بل پاس ہونا ایک طریقہ کار کی ابتدا ہے، ہم نے فاٹا کے عوام کا اعتماد حاصل کرنا ہے،ہم نے فاٹا کے عوام کو وہی سہولیات دینی ہیں جو ملک کے دیگر عوام کو میسر ہے جبکہ اس میں فرق نہیں ہونا چاہیے، آج ہاوس نے ثابت کیا کہ قومی اتفاق رائے قائم ہوسکتا ہے تاہم اخلاق سے ہٹ کر باتیں کرنے کی سیاست میں کوئی جگہ نہیں ہے۔

مزید : قومی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...