پارک میں پڑے پائپ میں سے نوجوان لڑکی کی لاش ایسی حالت میں برآمد کہ کوئی خوابوں میں بھی تصور نہ کرسکتا تھا، رونگٹے کھڑے کردینے والی خبر آگئی

پارک میں پڑے پائپ میں سے نوجوان لڑکی کی لاش ایسی حالت میں برآمد کہ کوئی ...
پارک میں پڑے پائپ میں سے نوجوان لڑکی کی لاش ایسی حالت میں برآمد کہ کوئی خوابوں میں بھی تصور نہ کرسکتا تھا، رونگٹے کھڑے کردینے والی خبر آگئی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

واشنگٹن(نیوز ڈیسک) امریکا میں اڑھائی سال قبل لا پتہ ہونے والی نوجوان لڑکی کی لاش دو روز قبل اس کے گھر کے قریبی علاقے سے ہی مل گئی ہے لیکن ایسی بھیانک حالت میں کہ ہر دیکھنے والا لرز اٹھا۔ میل آن لائن کے مطابق 18 سالہ ایبی سٹیپک 24اکتوبر 2015کے روز لاپتہ ہوئی تھی ۔ منگل کے روز اس کے جسم کی باقیات اس کے گھر کے قریبی علاقے کے چالموٹ پارک میں سیوریج کے پائپ سے ملی ہیں ۔ یہ وہی جگہ ہے جہاں اس کے لاپتہ ہونے والے دن اس کی گاڑی ملی تھی۔

ایبی کی گمشدگی کے روز بھی اس پارک کی سرچ کی گئی تھی لیکن اس کا کوئی پتہ نہیں چلا تھا ۔ ایف بی آئی کا خیال تھا کہ ایبی کے ساتھ کوئی افسوسناک واقعہ اسی جگہ پر پیش آیا تھا لہٰذا منگل کے روز اہلکار ریموٹ کنٹرولڈ روبورٹ کے ساتھ یہاں پہنچے جس کے اوپر ایک ویڈیو کیمرہ لگا ہوا تھا اور اسے سیوریج پائپوں میں تلاش کے لیے بھیجا گیا ۔ روبورٹ ڈیوائس کے کیمرے سے پتہ چلا کے سیوریج کے پائپ کے اندر کوئی چیز موجود ہے جس پر کھدائی کر کے پائپ کو توڑا گیا اور یہ دیکھ کر اہلکاروں کے رونگٹے کھڑے ہو گئے کہ یہ ایک انسانی جسم کی باقیات تھیں ۔ سٹیٹ کرائم لیب میں ان باقیات کا تجزیہ کیا گیا اور ڈی این اے ٹیسٹ سے ثابت ہوگا کہ یہ بدنصیب ایبی کے ہی جسم کے ٹکڑے ہیں ۔ پولیس کا کہنا ہے کہ تاحال یہ واضح نہیں کہ اسے کس نے قتل کیا تاہم اس کیس کی تحقیقات کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /بین الاقوامی