مستعفی ہونے پر کسی نے منانے کی کوشش نہیں کی :فوزیہ قصور ی

مستعفی ہونے پر کسی نے منانے کی کوشش نہیں کی :فوزیہ قصور ی
مستعفی ہونے پر کسی نے منانے کی کوشش نہیں کی :فوزیہ قصور ی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)تحریک انصاف چھوڑ کر پاک سرزمین پارٹی میں شمولیت کرنیوالی معروف سیاسی کارکن فوزیہ قصور ی نے کہا ہے کہ جب میں مستعفی ہوئی تو کسی نے نہیں پوچھا اور نہ کسی نے پوچھا کہ مستعفی کیوں ہوئی؟ انہوں نے کہا کہ قیادت کے چھوٹے چھوٹے سمجھوتوں کو تو نظر انداز کیا جا سکتا ہے لیکن جب سمجھوتے میں اصولو ں پر کمپرومائز کیا جائے تو پھر اس کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا ، میں چاہتی تھی کہ سیاست میں تبدیلی آئے اور چہروں میں تبدیلی آئے اور مڈل کلاس طبقہ آگے آئے لیکن تحریک انصاف میں اس کے برعکس ہو رہا ہے ۔

دنیا نیوز کے پروگرام ”نقطہ نظر “ میں گفتگو کرتے ہوئے فوزیہ قصور ی نے کہا کہ تحریک انصاف کو چھوڑ کر اس لئے پاک سرزمین پارٹی میں گئی کہ یہ مڈل کلاس لوگوں کی جماعت ہے اور یہ اقتدار میں نہیں ہے اور یہ اقتدار چھوڑ کر پاک سرزمین میں آئے ہیںاور اس وقت اپنی پارٹی بنائی جب ان کو پتہ چلا کہ الطاف حسین” را“ کیلئے کام کر رہے ہیں،انہوں نے کہا کہ میں تحریک انصاف اور پاک سرزمین کے اتحاد کی بھی مخالف نہیں ہوں میں سمجھتی ہوں کے سیاست میںگالیاں نہیں ہونی چاہئے بلکہ ایک دوسرے کا لحاظ ہونا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ جب میں مستعفی ہوئی تو کسی نے بھی منانے کی کوشش نہیں کی اور نہ کسی نے پوچھا کہ استعفیٰ کیوں دیا

مزید : قومی