رمضان ٹرانسمیشن میں کالر نے عامر لیاقت سے حضرت علیؓ کے بارے میں ایسا گستاخانہ سوال پوچھ لیا کہ غصے میں آکر پروگرام ہی چھوڑ کر چلے گئے ،ہنگامہ برپا ہو گیا

رمضان ٹرانسمیشن میں کالر نے عامر لیاقت سے حضرت علیؓ کے بارے میں ایسا ...
رمضان ٹرانسمیشن میں کالر نے عامر لیاقت سے حضرت علیؓ کے بارے میں ایسا گستاخانہ سوال پوچھ لیا کہ غصے میں آکر پروگرام ہی چھوڑ کر چلے گئے ،ہنگامہ برپا ہو گیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )معروف میزبان ڈاکٹر عامر لیاقت نجی نیوز چینل پر رمضان ٹرانسمیشن کے دوران ایک شخص کے سوال پر سیخ پا ہو گئے اور پھر پروگرام میں موجود مہمان قاری خلیل الرحمان جاوید سے بحث کے بعد پروگرام چھوڑ کر چلے گئے ۔

تفصیل کے مطابق بھارتی شہری گجرات سے کال کرنے والے شخص نے سوال کیا کہ کیا حضرت علی ؓکو خلافت ملی تھی یا نہیں ملی ؟،اس سوال پر عامر لیاقت نے غصے میں پوچھا کہ آپ اب تک بھارت میں کیا کر رہے ہو،آپ کو یہ ہی نہیں پتہ ،کیسی باتیں کر رہے ہیں آپ ،حضرت علی خلفائے راشدین میں سے ہیں ۔عامر لیاقت نے کالر سے کہا کہ آپ ذاکر نائیک کے مداح لگتے ہیں ،جس پر کالر نے کہا کہ آپ سوال کا جواب دیں ۔عامر لیاقت نے کالر سے کہا کہ آپ مسلمان ہو کر یہ سوال کیسے کر سکتے ہیں ۔اس کے بعد عامر لیاقت نے کالر کی کال بند کروادی اور ایک مہمان قاری خلیل الرحمان جاوید کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ ایسے موقع پر نہیں بولتے ۔اس پر قاری خلیل الرحمان جاوید نے کہا کہ اس کال کے دوران آپ نے ایک لفظ غلط کہا ،یہ تعلیم ڈاکٹر ذاکر نائیک کی نہیں ہے بلکہ یہ جہالت ہے ۔اس بات کے بعد عامر لیاقت اور قاری خلیل الرحمان میں بحث ہوئی تو عامر لیاقت پروگرام چھوڑ کر چلے گئے ۔

ویڈیو دیکھیں

مزید : ڈیلی بائیٹس /Ramadan Page /Ramadan News