بڑے عرب ملک میں روزہ خوروں کو پکڑنے کے لیے حکام نے کیا روپ دھار لیا؟ جان کر آپ کو بھی ہنسی آجائے گی

بڑے عرب ملک میں روزہ خوروں کو پکڑنے کے لیے حکام نے کیا روپ دھار لیا؟ جان کر آپ ...
بڑے عرب ملک میں روزہ خوروں کو پکڑنے کے لیے حکام نے کیا روپ دھار لیا؟ جان کر آپ کو بھی ہنسی آجائے گی

  

کوالا لمپور (ویب ڈیسک) ملائیشیا کے حکام نے روزہ خوروں کو پکڑنے کیلئے خانساموں اور ویٹروں کا روپ دھار لیا۔

سنگاپور کے اخبار کی رپورٹ کے مطابق ملائیشیا کی راست جوھر کے ضلع سگامات کے قانون نافذ کرنے والے اداروں کا دو تہائی عملہ ایک پروگرام کے تحت بھیس بدل کر 185 ہوٹلوں کی مانیٹرنگ کرتا ہے، ان میں بیشتر اہلکار مخصوص ڈشیں تیا رکرنے کی خاطر خواہ مہارت رکھتے ہیں،و ہ انڈونیشیا اور پاکستان کی زبانیں بھی بول سکتے ہیں جس کی وجہ سے گاہکوں کو یقین ہوجاتا ہے کہ وہ خانسامے اور ویٹرز ہیں۔ اس لئے وہ کھانے کا آرڈر دینے میں کوئی ہچکچاہٹ محسوس نہیں کرتے، کیونکہ ہوٹلوں میں کام کرنے والوں کی اکثریت تارکین وطن ہے۔

اخبار کے مطابق دن کے اوقات میں جیسے ہی مسلمان کھانے کا آرڈر دیتے ہیں، اہلکار ان کی تصاویر بنا کر مزید کارروائی کیلئے مذہبی امور کے محکمے کو بھیج دیتے ہیں۔ ایک پولیس افسر کے مطابق ملائیشیا میں دوہرا قانون نظام ہے، کئی علاقوں میں مسلمانوں سے شرعی قوانین کی پابندی کرائی جاتی ہے۔ ریاست جوھر میں روزہ خور کو چھ ماہ قید یا ایک ہزار رنگٹ جرمانہ، یا دونوں سزائیں اکٹھی ہوسکتی ہیں۔ انسانی حقوق کی تنظیموں نے روزہ خوروں کی اس جاسوسی کو قابل مذمت قرار دیا ہے۔

مزید : بین الاقوامی