گھوٹکی، طیارہ حادثہ میں جاں بحق انجینئر فرحان قادر کی نمازجنازہ ادا

گھوٹکی، طیارہ حادثہ میں جاں بحق انجینئر فرحان قادر کی نمازجنازہ ادا

  

ڈہرکی(نامہ نگار) ضلع گھوٹکی کے علاقہ عادل پور کے رہائشی انجینئر فرحان قادر جوکہ پی آئی اے کے طیارے میں لاہور سے کراچی آ رہا تھا جوگزشتہ روز کراچی میں لینڈنگ سے کچھ دیر قبل ہی رہائشی علاقے ماڈل کالونی میں گر کر تباہ ہو گیا تھا جس میں ڈہرکی کے قریبی علاقہ عادل پورکے رہائشی انجینئر فرحان قادر کلوڑ سمیت حادثے میں تقریبا 97 افراد کے جاں بحق ہونے کی تصدیق ہوچکی ہے فرحان کلوڑکی نماز جنازہ میں متعددسیاسی سماجی رہنماؤں رشتے داروں اوربڑی تعدادمیں شہریوں نے شرکت کی ورثاسے تعزیت کا سلسلہ جاری ہے جبکہ اس سلسلہ میں ملنے(بقیہ نمبر7صفحہ6پر)

والی ایک معلوماتی رپورٹ کے مطابق صوبائی محکمہ صحت سندھ کا کہنا ہے کہ اسپتالوں میں لائی جانے والی 66 نعشوں میں سے متعدد کی شناخت ہوچکی ہے جناح اسپتال میں 66 اور سول اسپتال کراچی میں 31 لاشیں منتقل کی گئی تھی دریں اثناء سول ایوی ایشن اتھارٹی کیمطابق پی ا?ئی اے کی پرواز پی کے 8303 میں 99 مسافر اور عملے کے 8 ارکان سوار تھیاور پی ا?ئی اے کے طیارے نے حادثے سے ایک گھنٹہ30 منٹ قبل لاہور ایئر پورٹ سے اڑان بھری تھی اور کراچی ائیر پورٹ پر لینڈنگ سے کچھ دیر پہلے گرکر تباہ ہوا۔آج طیارہ حادثے میں جاں بحق ہونے والے افراد کی لاشوں کی شناخت کرنے کے لیے پنجاب سے8 افرادپرمشتعمل فرانزک لیب کی ٹیم لاہور سے کراچی پہنچ گئیں۔ فرانزک ٹیم نے نمونے اکٹھا کرنا شروع کردی ہیں حادثے میں جاں بحق ہونے والے زیادہ ترافراد کی لاشیں جھلسی ہوئی ہیں جس کے باعث ان کی شناخت میں دشواری کا سامنا ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -