ٹڈی دل ختم کرنے کیلئے تمام ادارے متحرک، سید فخر امام

  ٹڈی دل ختم کرنے کیلئے تمام ادارے متحرک، سید فخر امام

  

کبیروالا(تحصیل رپورٹر)گندم خریداری کا مقررہ ہدف 70فیصد تک حاصل کرلیا ہے،انشاء اللہ! مطلوبہ ہدف کے قریب پہنچ جائیں گے،حکومت اور وزیر اعظم عمران خان کا موقف ہے کہ کاشتکاروں کو جتنی سہولتیں فراہم کرسکتے ہیں،کرتے رہیں گے،امسال”ٹڈی دل“ کی صورت میں ایک نئے خطرے کا سامنا ہے،جس پر قابو پانے کیلئے وفاقی حکومت کے 31ڈیپارٹمنٹ کے پروٹیکشن پلانٹ کے ماہرین ٹیکنیکل سپورٹ فراہم اور پاک فوج کے 8ہزار اہلکار بھی اپنا کردار (بقیہ نمبر8صفحہ6پر)

کررہے ہیں،ان خیالات کا اظہاروفاقی وزیر نیشنل فوڈ سیکورٹی اینڈ ریسرچ سید فخرامام نے گزشتہ روز موضع نڑہال کبیروالامیں چیئرمین مارکیٹ کمیٹی کبیروالاسردار حاجی احمد حیات خان سیال صاحبزادے،سردار اسلم حیات خان سیال،سردار معظم حیات خان سیال،سردار سمیع حیات خان سیال کے والد سابق ایڈمنسٹریٹرمارکیٹ کمیٹی سردار محمد خان سیال کی وفات پر اظہار تعزیت کرنے کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے بتایا کہ امسال پاکستان بھر سے گندم خریداری کا ہدف 82لاکھ ٹن تھا،اب تک62 لاکھ ٹن گندم خریداری کی صورت میں مقررہ ہدف 70فیصد تک حاصل کرلیا،انشاء اللہ!اپنے مقررہ ہدف کے قریب پہنچ جائیں گے۔وفاقی وزیرسید فخرامام نے بتایا کہ پنجاب میں 45لاکھ ٹن گندم خریداری کے ہدف میں سے40لاکھ ٹن،سندھ میں 15لاکھ ٹن ہدف میں سے 11ہزار لاکھ ٹن،پاسکو کے 18لاکھ ٹن ہدف میں سے 11ہزار لاکھ ٹن،بلوچستان میں ایک لاکھ ٹن ہدف میں سے25ہزار ٹن گندم خریدی جاچکی ہے جبکہ خیبر پختونخواہ میں موسمی حالات کی وجہ سے ابھی گندم خریداری نہیں ہوسکی ہے۔انہوں نے بتایا کہ گزشتہ برس42لاکھ ٹن گندم کی خریداری ہوئی تھی،اب تک ہونیوالی 70فیصد گندم خریداری کے مطابق ہم نے 20لاکھ ٹن گندم گزشتہ برس کے مقابلے میں خرید چکے ہیں۔ وزیر نیشنل فوڈ سیکورٹی اینڈ ریسرچ سید فخرامام نے کہا کہ امسال موسمی تبدیلیوں کے باعث مارچ اور اپریل میں غیر متوقع طور ہونیوالی بارشوں کی وجہ سے پنجاب میں کپاس کی کاشت ابھی تک بہت کم ہوئی ہے،البتہ سندھ کپاس کی کاشت کے حوالے سے آگے ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمیں ٹڈی دل کی صورت میں ایک نئے خطرے کا سامنا ہے،ٹڈی دل مشرقی افریقہ سے مڈل ایسٹ سے ہوتا ہوا14ماہ قبل پاکستان میں داخل ہوا،جس کے خاتمہ کیلئے کافی حد کامیابی حاصل کررہے ہیں،اب دوبارہ ٹڈی دل 51اضلاع میں داخل ہوچکا ہے،جس کے خلاف مہم میں وفاقی حکومت کے 31ڈیپارٹمنٹ کے پلانٹ پروٹیکشن کے ماہرین ٹیکنیکل سپورٹ فراہم کرہے ہیں اورپاک فوج کے 8ہزار اہلکاروں سمیت جہاز اور ہیلی کاپٹر بھی کام کررہے ہیں،اس حوالے سے اہم ترین کردار ضلع کی سطح پر ہے،جس کیلئے ڈپٹی کمشنر اور ان کے ساتھ افسران اپنا کردار احسن انداز میں ادا کررہے ہیں۔وفاقی وزیر نیشنل فوڈ سیکورٹی اینڈ ریسرچ سید فخرامام نے ٹڈی دل کو ختم کرنے کیلئے سپرے کی صورت میں 80ہزار کیمیکل دینے پر چین کا شکریہ ادا کرتے ہوئے حکومت پاکستان نے زراعت کے حوالے سے اپنی پالیس کے تحت ایک بڑے پیکج کا اعلان کیا ہے،جس کی وضاحت ایک علیحدہ پریس کانفرنس کروں گا۔قبل ازیں وفاقی وزیر نیشنل فوڈ سیکورٹی اینڈ ریسرچ سید فخرامام نے سردار محمد خان سیال مرحو م اورطیارہ حادثہ میں جان بحق ہونیوالوں کے فاتحہ خوانی کرتے ہوئے مرحومین کیلئے مغفرت،بلندی درجات اور ان کے سوگواران کیلئے صبر جمیل کی دعاکی۔اس موقع پر مخدوم سید باقر سلطان گردیزی،مہر امتیاز حسین ایڈووکیٹ،سردار غلام عباس خان سیال،قاسم خان ایری،کامران خان بلوچ،فیض الحسن خان چانڈیو،حفیظ سعیدی،شیخ محمد ارشد،بھی موجود تھے۔

فخرامام

مزید :

ملتان صفحہ آخر -