خیبر پختونخوا پولیس سربراہ کا تاریخی اور بڑا فیصلہ

  خیبر پختونخوا پولیس سربراہ کا تاریخی اور بڑا فیصلہ

  

پشاور(کرائمز رپورٹر)ائی جی پولیس کے پی کا تاریحی اور بڑا فیصلہ۔سپاہی اور ائی جی ایک ہی لیول کے لوگ ہیں سپاہی کو ائنڈہ سرٹیفکٹس یا انعامات دیتے وقت کرسی پر بٹھا کر دینا کا اعلان لائن میں کھڑا یونے کی بجاے سامنے بٹھا کر عزت کے ساتھ انعامات دی جاے اسطرح لیوی اور خاصہ دار فورسز کو پولیس میں ضم کرانے اور وعدے کی تکمل پر عمل درامد کے سلسلے میں سکنڈ فیز کی سمری بھی حکومت کو ارسال کر دی جن سے دوسرا فیز بھی مکمل ہوجاے گا۔۔ ثناااللہ عباسی. ان حیالات اظہار اء جی کیپی ڈاکٹر ثنااللہ عباسی نے پشاور سی پی او اپنے دفتر میں کرائمز اینڈ ٹیرازم جرنلٹس فورم کے صدر عظمت سے ون ٹو ون ملاقات اور تقریب انعامات میں کی تقریب میں ڈی ائی جی بنوں غعفور افریدی ڈی ائی جی سی ٹی ڈی طاہرایوب ڈی اء جی یاسین فاروق ڈی ائی جی ہیڈ کوراٹر سلمان چوہدری۔ڈی پی او لکی عبد الرووف بابر ڈی پی او شمالی وزیرستان شفع اللہ گنڈا پور بنوں اور لکی کے پولیس افسران اور اہکار بھی موجود تھے ۔ائی جی کاکہنا تھا کہ ایک بہترین فورسز کی کمانڈر ہونے پر سر فخر سے بلند ہے فورسز ہیومن راٹس پر کوئی سمجھوتہ نہ کریں دہشتگردی سمیت بھتہ حوری منشات اور دگر جرائم پر کنٹرول کرنے کیلے چوکس ہے سپاہی اور افسران کے حقوق برابر ہے عوام کی جان ومال کو تحفظ دینا ہماری اولین فرض ہے۔ائی جی کا کہنا تھا کہ پشاور اوربنوں ریجنز کی پولیس کاردگی پر فخر ہے کرائمز اور دہشگردی کے حلاف دونوں ریجنز کی کااروئیاں قابل تحسین ہے پہلی مرتبہ اج دلی حوشی ملی کہ میں اایسے فورسز کا سربراہ جن پر مجھے بہت فحر ہے۔ثنااللہ عباسیشمالی وزیرستان پولیس کی کاردگی پر پورے پولیس فورسر کا سر فحر سے بلند کیا ہے 48 گنھٹوں میں اہم ملزم کی گرفتاری پر الفاظ نہیں کہ شکریہ اد کرو ثنااللہ عباسی۔ہر کسی کی عزت نفس کا حیال رکھا جاے گا سپاہی اور افسر برابرہے ثنااللہ عباسی کا سی پی او میں تقسم انعامات و سرٹفکٹس کے دوران گفتگوبنوں لکی اور شمالی وزیرستان پولیس کے 36 افسران واہلکارواں میں بہتیرین کااردگی پر سرٹفکٹس سے نواز۔پولیس میں جزا اور سزا کا عمل جاری ہے ہر اچھی کاردگی پر پولیس کو ہر قسم داد دی جاے گی لیوی اور حاصہ دار کی سینڈ فیز کیلے سمری حکومت کو بجھوائی ہے جس پر بہت جلد عمل درامد ہو جاے اور لیوء حاصہطدراوں سے کیا گی اوعدہ پورہ ہوجاے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -