پولٹری انڈسٹری کو بند نہیں ہونے دیں گے، وزیر صنعت وتجارت پنجاب

پولٹری انڈسٹری کو بند نہیں ہونے دیں گے، وزیر صنعت وتجارت پنجاب

  

لاہور(لیڈی رپورٹر) صوبائی وزیر صنعت و تجارت میں ا سلم اقبال سے پاکستان پولٹری ایسوسی ایشن کے چیئرمین چوہدری محمد فرغام کی قیادت میں وفد نے ملاقات کی اور پولٹری انڈسٹری کو درپیش مسائل سے آگاہ کیا۔ ملاقات میں طے پایا کہ عید کے 3 دن تک مرغی کا گوشت260 روپے کلوگرام کے حساب سے فروخت ہوگا۔ عید کے بعد پولٹری ایسوسی ایشن کے ساتھ دوبارہ میٹنگ ہوگی اور پولٹری انڈسٹری کو درپیش مسائل کا جائزہ لیا جائے گا اور قیمتوں کا بھی تعین کیا جائے گا۔ سیکرٹری صنعت و تجارت ظفر اقبال، سیکرٹری لائیوسٹاک اور متعلقہ محکموں کے افسران بھی اس موقع پر موجود تھے۔ صوبائی وزیر صنعت و تجارت میاں اسلم اقبال نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پولٹری ایسوسی ایشن کے ساتھ معاملات کامیابی سے طے پا گئے ہیں۔ عید کے 3 دن تک مرغی کا گوشت 260 روپے فی کلوگرام کے حساب سے فروخت ہوگا۔ دکانداروں کو خبردار کرتا ہوں کہ اگر کسی نے زائد قیمت پر گوشت فروخت کرنے کی کوشش کی تو اس کے خلاف سخت ایکشن ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ملک کی انڈسٹری چلے گی تو قومی معیشت بھی مضبوط ہوگی۔ ہم چاہتے ہیں کہ ہر انڈسٹری چلے اور روزگار کے مواقع پیدا ہوں۔ پولٹری انڈسٹری کو بند نہیں ہونے دیں گے۔ اس کے تمام تحفظات دور کئے جائیں گے اور عید کے بعد پولٹری ایسوسی ایشن کے ساتھ معاملات طے کرکے قیمتوں کا بھی تعین کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ پولٹری انڈسٹری کا معیشت کے فروغ میں بڑا اہم کردار ہے اور ہم اس کردار کو تسلیم کرتے ہیں۔ پولٹری انڈسٹری کے مسائل کے حل کیلئے پنجاب حکومت وفاقی حکومت کو اپنی سفارشات بھی بھجوائے گی تاکہ لوگوں کو مرغی کا گوشت سستے داموں ملے۔ اجلاس کے دوران طیارہ حادثے کے شہدا کے ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی بھی کی گئی۔ بعدازاں صوبائی وزیر میاں اسلم اقبال نے ٹان شپ ماڈل بازار اور دیگر مارکیٹوں کا دورہ کیا اور اشیائے ضروریہ کی قیمتوں اور معیار کا جائزہ لیا۔ صوبائی وزیر نے اس موقع پر ہدایت کی کہ اشیائے خورد و نوش کی سرکاری نرخوں پر فروخت یقینی بنائی جائے۔

میاں اسلم اقبال

مزید :

پشاورصفحہ آخر -