گوگل،فیس بک اور ٹویٹر کے ملازمین کو مزید7 ماہ گھر میں کام کرنیکی ہدایات

گوگل،فیس بک اور ٹویٹر کے ملازمین کو مزید7 ماہ گھر میں کام کرنیکی ہدایات

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے متعدد کمپنیوں کی جانب سے اپنے اپنے ملازمین کی حفاظت کے لیے انہیں گھروں سے کام کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔متعدد معروف کمپنیاں جس میں گوگل، فیس بک اور ٹوئٹر وغیرہ شامل ہیں، ان کے ملازمین عالمی وبا کے پیش نظر گھروں میں ہی رہ کر کام کر رہے ہیں۔گزشتہ دنوں فیس بک اور گوگل نے اپنے ملازمین کے لیے گھر سے کام کرنے کی پالیسی میں 7 ماہ کے مزید اضافے کا اعلان کیا تھا۔دوسری جانب حال ہی میں مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر کے سربراہ نے بھی ملازمین کو ہمیشہ گھر سے کام کرنے کا آپشن دیا تھا۔اب سماجی رابطوں کے مقبول ترین پلیٹ فارم فیس بک کے بانی مارک زکربرگ کی جانب سے بھی اعلان کیا گیا ہے کہ اگر ملازمین چاہیں تو وہ گھروں سے مستقل کام کر سکتے ہیں۔مارک زکر برگ کا کہنا تھا کہ اگلے 5 سے 10 سالوں کے دوران فیس بک کے 50 فیصد ملازمین گھروں میں رہ کر ہی کام کریں گے۔

گوگل اعلان

مزید :

صفحہ آخر -