1992 کے بعد پہلی بار امریکہ نے ایٹمی دھماکہ کرنے  پر غور شروع کردیا، دنیا کیلئے خطرناک خبر آگئی

1992 کے بعد پہلی بار امریکہ نے ایٹمی دھماکہ کرنے  پر غور شروع کردیا، دنیا کیلئے ...
1992 کے بعد پہلی بار امریکہ نے ایٹمی دھماکہ کرنے  پر غور شروع کردیا، دنیا کیلئے خطرناک خبر آگئی

  

واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن) ایک امریکی اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ ٹرمپ انتظامیہ کی جانب سے روس اور چین کو واضح پیغام دینے کیلئے 1992 کے بعد پہلی بار ایٹمی دھماکہ کرنے پر غور کیا جارہا ہے۔

اخبار واشنگٹن  پوسٹ کے مطابق 15 مئی کو ٹرمپ انتظامیہ کے ایک اعلیٰ سطح کے اجلاس میں تجرباتی ایٹمی دھماکہ کرنے پر غور کیا گیا ۔ اجلاس میں کہا گیا کہ روس اور چین کو وارننگ دینے کیلئے جلد ہی تجرباتی ایٹمی دھماکہ کیا جانا چاہیے۔

خیال رہے کہ امریکہ نے آخری بار 1992 میں تجرباتی ایٹمی دھماکہ کیا تھا لیکن تب تک وہ 1,032 ایٹمی دھماکے کرچکا تھا جن میں دوسری جنگِ عظیم کے دوران 1945 میں جاپانی شہروں ہیروشیما اور ناگاساکی کو تباہ کرنے والے دو ایٹم بموں کے دھماکے بھی شامل تھے۔

مبصرین کا کہنا ہے کہ اگر امریکہ کی جانب سے ایٹمی دھماکہ کیا گیا تو باقی ممالک بھی خاموش نہیں بیٹھیں گے ۔ اس دھماکے سے نہ صرف دوسری ایٹمی قوتوں کو شہہ ملے گی بلکہ دنیا میں ایٹمی ہتھیاروں کی ایک نئی دوڑ شروع ہوجائے گی۔

مزید :

بین الاقوامی -