ملتان: سیاست دان شہریوں کو لاوارث چھوڑ کر فرا ر 

ملتان: سیاست دان شہریوں کو لاوارث چھوڑ کر فرا ر 

  

   ملتان (سٹاف رپورٹر)شہر کے وسط میں واقع دس ہزار سے زائد نفوس پر مشتمل محلہ رحیم آباد، شمس آباد، بستی کھادل، چاہ عبداللہ والہ اور، رحمان آباد کی آبادی سیوریج، سٹریٹ لائٹس، پینے کے صاف پانی جیسی منیادی ضروریات زندگی سے محروم ہے سالہاسا ل ہے ارباب اختیار کی توجہ دیلائے جانے کے باوجود آج بھی گلی محلوں میں گندگی کے ڈیھر لگے ہوئے ہیں جو (بقیہ نمبر10صفحہ6پر)

مختلف بیماریوں کا باعث بن رہے ہیں جبکہ سٹریٹ لائٹس نہ ہونے کی وجہ سے رہائشیوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے علاقہ میں سیوریج کا پانی بعض مقامات پر حال ہی میں بچھائی جانے والی واٹر سپلائی کی لائنوں میں شامل ہو رہا ہے جس کی وجہ سے لوگ گندہ، آلودہ پانی پینے پر مجبو ر ہو رہے ہیں اس سلسلہ میں ااہل علاقہ کی بڑی تعداد عکام کے خلاف سراپا احتجاج بھی ہوچکی ہے علاقہ کی نمایاں سیاسی و سماجی شخصیات نے روزنامہ پاکستان کی ٹییم کو مدعو کرکے علاقہ کے مسائل سے آگاہ کیا اور علاقہ حکام کو یہ مسائل حل کرنے کی استدعا کی ہے سماجی رہنما ء سید غفور علی شاہ،سیاسی رہنماایم  یاسین جاوید،نصراللہ خان، ایم نواز بلوچ، سلیم راجپوت، ایم اکبر خان، حیدر علی، اشفاق بیرا، ایم شریف خان بلوچ، خلیل، بلو بلوچ،  ارشد ملک، ایم خالد نواز بھٹی نے بتایا کہ علاقہ میں صفائی  کا انتہائی ناقص نظام ہے جسکی وجہ سے گندگی کے ڈھیر ہر طرف پڑے گلیاں بھر جاتی ہیں لوگ بیمار ہو رہے ہیں۔ علاقہ میں ٹاؤن ہسپتال کے نام پر صحت کا ادارہ تو بنا دیا گیا ہے لیکن کوئی پرسان حال نہیں ہے مریضوں کو صرف نشتر ہسپتال ریفرکر دیا جاتا ہے اور دہپر 2 بجے کے بعد تو صرف ایک بیلدار، یا درجہ چہارم  کا ملازم بیٹھا کر سارا عملہ غائب ہوجاتا ہے۔ اہل علاقہ نے بتایا کہ پینے کا صاف پانی تک میسر نہین اس میں بعض مقامات پر سیوریج کا پانی مل رہا ہے اہل علاقہ کیا کریں ہم شہر کے عین درمیان میں رہائش پذیر ہیں ہمارا یہ حال ہے تو دور دراز بسنے والوں  کا کہا ہوتا ہوگا۔ اگر کوئی سیوریج کا ڈھکنا ہے تو وہ بھی ٹوٹا ہوا ہے۔ ارباب اختیار ہمارے علاقہ کو بھی اپنی ترجیحات میں لائیں ورنہ لوگ بری طرح متاثر ہو رہے ہیں۔ 

گفتگو

مزید :

ملتان صفحہ آخر -