کم وولٹیج مسائل کے حل کیلئے عملی اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں: ڈاکٹر امجد علی 

کم وولٹیج مسائل کے حل کیلئے عملی اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں: ڈاکٹر امجد علی 

  

 پشاور(سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخوا کے وزیر ہاؤسنگ ڈاکٹر امجد علی نے کہا ہے کہ سوات کے علاقوں شموزئی، رنگیلہ و زرخیلہ میں بجلی مرمتی کام و کم وولٹیج مسائل کے حل کیلئے عملی اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں، دیہاتوں میں ہر گھر تک بنیادی سہولیات کی فراہمی کے وعدوں سے تکمیل تک کا سفر سب کے سامنے ہے، عوام کی فلاح و بہبود اور ان کا معیار زندگی بہتر بنانا موجودہ حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہے اور صحت انصاف کارڈ جیسا منصوبہ اس جانب ایک اہم قدم ہے جس سے دیہاڑی دار مزدور اور جاگیردار ایک جیسے مستفید ہورہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر ڈاکٹر امجد علی نے شموزئی سوات و ملحقہ دیہاتوں کیلئے بجلی منصوبے پر جاری کام کا جائزہ لیتے وقت میڈیا سے بات چیت کے دوران کیا۔ وزیر ہاؤسنگ نے کہا کہ مذکورہ بجلی منصوبے کی تکمیل سے بجلی فیڈرز کا تحفظ و بہتر کارکردگی سمیت کم وولٹیج جیسے مسائل پر قابو پا لیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ عوامی مطالبے پر ویلج کونسل پارڑئی میں بھی بجلی کے کم وولٹیج مسئلے کے حل سمیت گورتئی بوائز پرائمری سکول کو مڈل کا درجہ دلایا۔ ڈاکٹر امجد علی نے کہا کہ گاؤں مانیار میں مسجد نمرہ کی تزئین و آرائش کے کام کی تکمیل سمیت وہاں کے راستوں و گزرگاہوں کی پختگی پر بھی کام جاری ہے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ گاؤں خزانہ شموزئی سوات جناز گاہ کے قیام کیلئے کوششیں کی جا رہی ہیں جس پر عنقریب کام کا آغاز بھی ہوجائے گا۔ صوبائی وزیر نے خیبر پختونخوا حکومت کے صحت کے شعبے میں فلیگ شپ منصوبے صحت انصاف کارڈ کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ حلقہ نیابت کا ایک غریب دیہاڑی دار مزدور اختر شدید زخمی ہوا اور اس کا علاج صحت انصاف کارڈ پر مفت ہوا۔ ان کا کہنا تھا کہ ایک دیہاڑی دار کا مفت علاج و معالجہ ہونا اور اس کا حکومتی اقدامات پر اطمینان کا اظہار کرنا وزیراعظم عمران خان کے فلاحی وژن اور غریب پروری کی ایک اعلیٰ مثال ہے۔

مزید :

صفحہ اول -