چین اور روس کے جنگی جہازبغیر اطلاع کے جنوبی کوریا کی فضائی حدود میں داخل

چین اور روس کے جنگی جہازبغیر اطلاع کے جنوبی کوریا کی فضائی حدود میں داخل
چین اور روس کے جنگی جہازبغیر اطلاع کے جنوبی کوریا کی فضائی حدود میں داخل

  

سیول (رضا شاہ) جنوبی کوریا کے جوائنٹ چیفس آف اسٹاف (JCS) نے بتایا ہے کہ متعدد روسی اور چینی جنگی طیارے بغیر اطلاع کے جنوبی کوریا کے فضائی دفاعی شناختی زون (KADIZ) میں داخل ہوئے۔ جنوبی کوریا کے جوائنٹ چیفس آف اسٹاف نے کہا کہ دو چینی اور چار روسی جنگی طیارے جنوبی کوریا کے فضائی دفاعی شناختی زون میں داخل ہوئے لیکن انہوں نے جنوبی کوریا کی فضائی حدود کی خلاف ورزی نہیں کی۔ نامہ نگاروں کو بھیجے گئے ایک ٹیکسٹ پیغام میں انہوں نے کہا کہ ہم نے فوج کو ممکنہ حادثاتی حالات کے خلاف تیاری کے لیے حکمت عملی پر مبنی اقدامات کرنے کے لیے فضائیہ کو تیار رہنے کا حکم دے دیا ہے۔ جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کے مطابق منگل کی صبح 7:56 بجے، دو چینی H-6 بمبار طیارے جنوبی اویدو نامی جزیرے کے شمال مغرب میں 126 کلومیٹر دور ایک علاقے سے جنوبی کوریا کے فضائی دفاعی شناختی زون میں داخل ہوئے اور بعد میں وہ مشرقی سمندر کی طرف بڑھے اور صبح 9:33 بجے کے قریب زون سے باہر نکلے۔ بعد ازاں، دونوں چینی جنگی طیارے روس کے چار جنگی طیاروں کے ساتھ شامل ہوئے، جن میں دو TU-95 بمبار طیارے بھی شامل تھے اور صبح 9:58 پر ایک ساتھ زون میں داخل ہوئے اور پھر وہ صبح 10:15 پر زون سے نکل گئے۔ تقریباً 3:40 بجے، چار چینی اور دو روسی فوجی طیاروں کو جنوبی اویدو نامی جزیرے کے جنوب مشرق میں 267 کلومیٹر کے فاصلے پر ایک علاقے میں پرواز کرتے ہوئے دیکھا گیا۔ ایئر ڈیفنس زون علاقائی فضائی حدود نہیں ہے لیکن اسے غیر ملکی طیاروں کو اپنی شناخت کرانے کے بعد داخل ہونے کی اجازت ہے تاکہ حادثاتی جھڑپوں کو روکا جا سکے۔

مزید :

بین الاقوامی -