وزارت خزانہ کی سرکاری ملازمین کی تنخواہیں 20فیصد بڑھانے کی تجویز، وزیر خزانہ نے فیصلہ کابینہ پر چھوڑ دیا

  وزارت خزانہ کی سرکاری ملازمین کی تنخواہیں 20فیصد بڑھانے کی تجویز، وزیر ...

  

        اسلام آباد  آن لائن) آئندہ مالی سال کے وفاقی  بجٹ میں وزارت خزانہ نے سرکاری  ملازمین کی تنخواہوں میں 20 فیصد اضافے کی تجویز دے دی تاہم  وزیر خزانہ  اسحاق ڈار نے فیصلہ کے لیے معاملہ وفاقی کابینہ کے لیے موخر کر دیا۔میڈیارپورٹ  کے مطابق ذرائع نے   بتایا ہے کہ بجٹ کا حجم 14600ارب جبکہ بجٹ خسارہ 00 78 ارب روپے ہو سکتا ہے جو وفاقی خسارہ رواں مالی سال کے متعینہ خسارے کے ہدف سے تقریباً تین چوتھائی زیادہ ہوگا۔اگلے مالی سال 2023-24 کے لیے وفاقی بجٹ خسارہ اخراجات اور  آمدنی کے درمیان فرق مجموعی ملکی پیداوار کے تقریباً 7.4 فیصد کا تخمینہ لگایا گیا ہے۔یہ کافی بڑا ہے لیکن اب بھی جی ڈی پی کا تقریباً 0.7  فیصدہے جو جانے والے  مالی سال کے نظرثانی شدہ خسارے سے کم ہے۔ بجٹ کے نصف سے زیادہ رقم سود کی ادائیگی کے  لئے مختص رہے گی۔۔ذرائع کا کہنا ہے کہ صوبائی کیش سرپلسز کی وجہ سے مجموعی پرائمری بجٹ کو تھوڑا سا مثبت دکھایا جا سکتا ہے۔   

مزید :

صفحہ اول -