جنس معلوم کرنے کیلئے حاملہ بیوی کا آپریشن کروانے والے کو عمر قید

جنس معلوم کرنے کیلئے حاملہ بیوی کا آپریشن کروانے والے کو عمر قید
جنس معلوم کرنے کیلئے حاملہ بیوی کا آپریشن کروانے والے کو عمر قید

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لکنؤ (ڈیلی پاکستان آن لائن)بھارتی ریاست اتر پردیش کے ضلع بوداؤں میں بچے کی جنس معلوم کرنے کے لیے اپنی 8 ماہ کی حاملہ بیوی کا پیٹ چاک کرنے والے شخص کو عمر قید کی سزا سنادی گئی۔

بھارتی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق واقعہ 19 ستمبر 2020 کو سول لائنز کے علاقے میں پیش آیا تھا۔ جہاں 46 سالہ ملزم پنا لال نے ایک پنڈت کے کہنے پر اپنی بیوی انیتا دیوی پر درانتی سے پیٹ چاک کیا۔

ملزم نے بتایا تھا کہ پنڈت نے کہا کہ اس کی بیوی دوبارہ بیٹی پیدا کرنے والی ہے اور ملزم بیٹے کا خواہش مند تھا۔

انیتا کو پولیس نے دہلی کے اسپتال میں داخل کرادیا تھا جہاں ڈاکٹر اس کی جان تو بچا لیں لیکن نومولود کو نہیں بچا سکے ۔ ڈاکٹرز کے مطابق پنڈت کی پیشگوئی کے برعکس خاتون بیٹی نہیں بیٹے کو جنم دینے والی تھیں ۔

پنا لال کو انڈین پینل کوڈ(آئی پی سی) کے تحت اقدامِ قتل اور عورت کی رضامندی کے بغیر اسقاط حمل کا مقدمہ درج کر کے جیل بھیج دیا گیا تھا، 2021 میں اس کے خلاف چارج شیٹ جمع کرادی گئی تھی۔

انیتا کے بھائی روی سنگھ نے بتایا کہ انیتا کی 5 بیٹیان تھیں لیکن پنا لال کو لڑکا چاہیے تھا، جب میری بہن چھٹی بار حاملہ ہوئی تو پنا لال چاہتا تھا کہ وہ اسقاط حمل کرا دے کیونکہ گاؤں کے کسی پنڈت نے اس کے دماغ میں یہ بات بٹھا دی تھی کہ انیتا دوبارہ بیٹی پیدا کرنے والی ہے ۔

عدالت نے قتل کی کوشش کرنے کے جرم کے لیے مجرم کو عمر قید کی سزا سنا ئی جبکہ50 ہزار روپے جمع کرونے کی ہدایت بھی کی ۔