عربی بولنے پر شکاگو ائیر پورٹ پر فلسطینی نو جوانوں کو جہاز میں سوار ہونے سے روک دیا گیا

عربی بولنے پر شکاگو ائیر پورٹ پر فلسطینی نو جوانوں کو جہاز میں سوار ہونے سے ...

شکاگو(این این آئی) پیرس حملوں کے بعد یورپی ممالک میں ہر مسلمان کو شک کی نگاہ سے دیکھا جانے لگا ۔ گزشتہ روز شکاگومڈ وے انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر دو فلسطینی نوجوانوں کو محض اس لیے جہاز میں سوار ہونے سے روک دیا گیا کہ وہ آپس میں عربی زبان میں گفتگو کر رہے تھے دونوں نوجوان مہرخلیل اور انس عیادجب سوار ہونے کے لیے جہاز کی طرف جانے لگے تو انہیں گیٹ پر ایئرپورٹ حکام نے روک لیا۔ایئرپورٹ حکام نے انہیں کہا کہ تم آپس میں عربی میں گفتگو کر رہے تھے اس لیے دیگر مسافروں نے شکایت کی اور کہا کہ وہ تم دونوں کے ساتھ سفر کرنے سے خوفزدہ ہیں اس لیے تم جہاز میں سوار نہیں ہو سکتے۔ ایئرپورٹ حکام دونوں کو ایک کمرے میں لے گئے جہاں ان سے پوچھ گچھ کی گئی اور پھر انہیں ایک اورپرواز پر جانے کی اجازت دے دی گئی۔ جب وہ دوسرے جہاز میں سوار ہوئے تو مہر خلیل نے ہاتھ میں ایک سفید رنگ کا ڈبہ پکڑ رکھا تھا ۔

جہاز میں موجود دیگر مسافروں نے اس ڈبے پر شک کا اظہار کیا اور اسے کھولنے کو کہا۔خلیل نے ڈبہ کھولا تو اس میں مٹھائی تھی۔ خلیل نے وہ مٹھائی ان مسافروں کو بھی کھلائی۔ خلیل نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ دوسرے جہاز کے مسافر بھی خوفزدہ نظر آ رہے تھے مگر جب میں نے ان کے کہنے پر مٹھائی کا ڈبہ کھولا اور انہیں مٹھائی کھانے کے لیے پیش کی تو وہ نارمل ہو گئے اور اس کے بعد سفر خوشگوار رہا۔

مزید : عالمی منظر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...