محفل سماع

محفل سماع

پنجاب انسٹیٹیوٹ آف لینگوئج، آرٹ اینڈ کلچر، محکمہ اطلاعات و ثقافت، حکومت پنجاب کے زیر اہتمام ایک عظیم الشان محفل سماع منعقد ہوئی جس میں معروف قوال تنویر سلامت نوشاہی اور ان کے ہمنواؤں نے قوالی کے ذریعے صوفیانہ کلام پیش کر کے حاضرین سے بھرپور داد وصول کی۔ محفلِ سماع کے انعقاد کا مقصد صوفیاء کے امن کے پیغام کو پھیلانے کے ساتھ ساتھ یہ بھی تھا کہ لاہور کے علاوہ پنجاب کے دیگر علاقوں سے تعلق رکھنے والے فنکاروں کی بھی حوصلہ افزائی کی جائے اور ان کو موقع فراہم کیا جائے کہ وہ صوبائی سطح پر اپنے فن کا مظاہرہ کر سکیں لہٰذا تنویر سلامت نوشاہی کے ساتھ ایک محفلِ سماع کا فیصلہ کیا گیا جن کا تعلق منڈی بہاؤ الدین سے ہے۔ تنویر سلامت نوشاہی کا خاندان دربار حضرت نوشہ گنج بخش قادریؒ سے گزشتہ چار سو سال سے وابستہ ہے اور قوالی کا فریضہ سرانجام دے رہا ہے۔ تنویر سلامت نوشاہی نے حمد، نعت، منقبت اور صوفیانہ کلام منفرد انداز میں پیش کیا۔ خاص طور پر انہوں نے حضرت میاں محمد بخشؒ کے کلام کو نئی دھنوں کے ساتھ متعارف کروایا جسے بے حد سراہا گیا۔ محفلِ سماع میں مشیر وزیر اعلیٰ پنجاب شاہد ریاض گوندل نے خصوصی طور پر شرکت کی۔ انہوں نے حاضرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ صوفیاء نے قوالی کے ذریعے باہمی امن و محبت کے جس پیغام کو پھیلایا اس کے اثرات آج تک محسوس کئے جا سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آج کے افراتفری کے دور میں بھی قوالی اذہان کو جِلا بخشنے کا کام بخوبی سرانجام دے رہی ہے۔ انہوں نے شاندار محفلِ سماع کے انعقاد پرمنتظمین کو مبارکباد دی اور اس سلسلے میں ان کی کوششوں کی بھرپور تعریف کی۔ ڈاکٹر صغرا صدف ڈائریکٹر پنجاب انسٹیٹیوٹ نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب انسٹیٹیوٹ کی ہمیشہ یہ کوشش رہی ہے کہ فن و ثقافت کے لئے خدمات سرانجام دینے والے افراد کی بھرپور حوصلہ افزائی کی جائے اور محفلِ سماع بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ قوالی کے ذریعے صوفیاء نے محبت، امن، برداشت اور رواداری کے پیغام کو فروغ دیا یہی وجہ ہے کہ آج بھی قوالی سن کر سامع پر وجد طاری ہو جاتا ہے اور وہ اپنے آپ کو ایک ایسی دنیا میں محسوس کرتا ہے جہاں نفرتوں اور تنگ نظری کا دور دور تک کوئی نشان نہیں۔ انہوں نے حاضرین کا شکریہ بھی ادا کیا کہ ان کی شمولیت سے اس محفل کی رونقیں دوبالا ہو گئیں۔ تقریب کی نقابت کرتے ہوئے محمد عاصم چودھری ڈپٹی ڈائریکٹر پِلاک نے کہا کہ برصغیر میں قوالی کا باقاعدہ آغاز حضرت امیر خسروؒ سے منسوب ہے اور قوالی کی یہ روایت چشتی سلسلے سے ہوتی ہوئی آج کی جدید قوالی تک پہنچی ہے جس کو بامِ عروج پر استاد نصرت فتح علی خاں نے پہنچایا۔ محفلِ سماع میں معروف ادیبہ نیلم احمد بشیر، گلوکارہ نرمل شاہ اور خاقان حیدر غازی ڈپٹی ڈائریکٹر پِلاک کے علاوہ مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

مزید : ایڈیشن 2

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...