پیرا میڈیکل سٹاف کی ہڑتال ، سول سیکرٹریکٹ کے باہر دھرنا ، ہسپتالوں کا نظانم ٹھپ ہو گیا

پیرا میڈیکل سٹاف کی ہڑتال ، سول سیکرٹریکٹ کے باہر دھرنا ، ہسپتالوں کا نظانم ...

 لاہور( جنرل رپورٹر) پیرا میڈیکل سٹاف نے صوبائی دارالحکومت کے ہسپتالوں کا پہیہ جام کر دیا ، گزشتہ روز ایسوسی ایشن کی اپیل پر شہر کے تمام سرکاری ہسپتالوں میں پیرا میڈیکل سٹاف نے ہڑتال کر دی۔ سروسز ہسپتال سے شروع ہونے والی احتجاجی تحریک نے ضلع لاہور کے تمام ٹیچنگ اور ضلعی ہسپتالوں کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے، مریضوں کے 80 فیصد آپریشن ملتوی کر دئیے گئے۔ لیبارٹریاں ، ایکسرے ، الٹراساؤنڈ یونٹ بھی بند کر دئیے گئے جس سے ہسپتالوں میں کام ٹھپ ہو گیا۔ وارڈ یں کوڑا کرکٹ اور فضلے سے بھر گئیں جنہیں نہ اٹھائے جانے سے وارڈوں میں بھی بدبو اور تعفن پھیل گیا ۔ بعد ازاں تمام ہسپتالوں کے مظاہرین ریلیوں کی شکل میں سول سیکرٹریٹ پہنچ گئے اور انہوں نے سیکرٹریٹ کے باہر دھرنا دے کر ٹریفک بند کر دی جس سے دور دور تک ٹریفک پھنس گئی ۔ دھرنے میں سروسز ، میو ، جنرل ، جناح ، گنگا رام، لیڈی ولنگڈن، لیڈی ایچی سن سمیت تمام ضلعی ہسپتالوں کی پیرامیڈیکل سٹاف ایسوسی ایشنیں اپنی اپنی ریلیاں نکال کر شامل ہو گئیں دھرنے میں خواتین ملازمین کی بڑی تعداد بھی شامل تھی۔ بتایا گیا ہے کہ احتجاج کا آغاز 4 روز قبل ہوا جس میں ایسوسی ایشن کے چیئرمین یوسف بلا اور ارشد بٹ نے موقف اختیار کیا کہ سروسزہسپتال انتظامیہ نے نے درجہ چہارم کے ملازمین کی رہائش گاہیں ، وائی ڈی اے کے ڈاکٹروں کو الاٹ کردی ہیں۔ ہسپتال کے اندر غریب ملازمین کو ادویات فراہم نہیں کی جا رہیں، ہسپتال انتظامیہ نے 52 ایسے ورک چارج ملازمین کو برطرف کیا ہے جو سالہا سال سے تعینات ہیں اس پر محکمہ صحت نے نوٹس نہ لیا تو ایسوسی ایشن احتجاج کا دائرہ کار پورے لاہور کے ہسپتالوں تک وسیع کر دے گی۔ سول سیکرٹریٹ کے باہر دھرنا رات تک جاری رہا۔ تاہم کوئی افسر ’’ دھرنے ‘‘ کے قائدین سے مذاکرات کے لئے نہ آیا۔ جس کے خلاف ملازمین سینہ کوبی اور نعرے بازی کرتے رہے۔ اس حوالے سے ایسوسی ایشن کے صدر یوسف بلا اور چیئرمین جاوید چوہان نے کہا کہ مطالبات کی منظوری تک دھرنا جاری رکھیں گے۔ آخری اطلاعات کے مطابق وزیر اعلیٰ کی ہدایت پر مشیر صحت خواجہ سلیمان رفیق، سیکرٹری صحت جواد رفیق ملک اور ڈی جی ہیلتھ ڈاکٹر امجد شہزاد دھرنے میں پہنچ گئے اور کامیاب مذاکرات کئے جس پر مطالبات منظور کرنے کی یقین دہانی پر دھرنا ختم کر دیا گیا۔ اس موقع پر خواجہ سلیمان رفیق اور سیکرٹری صحت جواد رفیق ملک نے کہا کہ ورک چارج کو ملازمت سے نکالا نہیں جائے گا ان کو تنخواہیں دلوائیں گے اور سروس سٹرکچر پر عمل کروائیں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...