ایوان کارکنان میں مولانا ظفر علی خان کا کلام سنانے کا مقابلہ

ایوان کارکنان میں مولانا ظفر علی خان کا کلام سنانے کا مقابلہ

لاہور(جنرل رپورٹر)نظریۂ پاکستان ٹرسٹ کے زیراہتمام ایوان کارکنان تحریک پاکستان،شاہراہ قائداعظمؒ لاہور میں تقریبات یوم ظفر علی خانؒ کے سلسلے میں سکولوں کے طلبا وطالبات کے مابین مولانا ظفر علی خانؒ کا کلام ترنم کے ساتھ سنانے کاانعامی مقابلہ منعقد ہوا۔پروگرام کی صدارت معروف ادیب و صحافی میاں ابراہیم طاہر نے کی۔مقابلہ کے منصف کے فرائض صدارتی ایوارڈ یافتہ نعت خواں الحاج اختر حسین قریشی نے انجام دیے۔میاں ا براہیم طاہر نے طلبہ سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ زندہ قومیں ہمیشہ اپنے محسنوں کویادرکھتی ہیں اوران کے نقش قدم پر چلتی ہیں۔ مولانا ظفر علی خان ایک ہمہ پہلو شخصیت تھے۔ ا ن کی شاعری کا مرکز توحید باری تعالیٰ‘ عشق رسول کریمؐ اور اسلام کے لافانی نظریات تھے۔ اُنہوں نے برصغیر میں مسلمانوں کے خلاف شروع ہونے والی تحریکوں کا ڈٹ کر مقابلہ کیا اور اپنے اخبار زمیندار کو تحریک پاکستان کی ایک آواز بنا دیا تھا۔

مولانا ظفر علی خان نے اپنے اصولوں پر کبھی کوئی سمجھوتہ نہیں کیا۔ منصف کے مرتب کردہ نتائج کے مطابق محمد متین نے اول‘ محمد شبیر نے دوئم اور سید شہریار نے سوئم پوزیشن حاصل کی۔ تقریبات یوم ظفر علی خانؒ کے سلسلے میں آج منگل24نومبر کو دس بجے صبح کالجوں اور یونیورسٹیوں کے طلبا وطالبات کے مابین مولانا ظفر علی خانؒ کا کلام ترنم کے ساتھ سنانے کاانعامی مقابلہ منعقد ہو رہا ہے۔ ان تقریبات کا اہتمام تحریک پاکستان ورکرز ٹرسٹ کے اشتراک سے کیا گیاہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4