مختلف ٹریفک حادثات میں 3جاں بحق افرادکوسپردخاک کردیا گیا

مختلف ٹریفک حادثات میں 3جاں بحق افرادکوسپردخاک کردیا گیا

لاہور(اپنے نامہ نگار سے)صوبائی دارلحکومت میں اتوار کے روزحادثات میں ہلاک ہو نے والے 3سالہ بچے سمیت 3افراد کی لاشیں پولیس نے ضروری کارروائی کے بعد ورثاء کے حوالے کر دیں جن کو سینکڑوں سوگوران کی موجودگی میں میں سپرد خاک کر دیا جبکہ پولیس نے حادثات کے ذمہ داروں کے خلاف مقدمات درج کر کے تفتیش شروع کر دی ہے ۔تفصیلا ت کے مطابق اتوار کے روزباٹا پور کے علاقہ میں جنڈیالہ پنڈکے رہائشی دو دوست19سالہ محمد آصف ولد محمد لطیف اور25سالہ محمد یامین ولد محمد حفیظ گزشتہ روز موٹر سائیکل نمبریLEZ-2627پر سوار ہو کر جلو پنڈ کی طرف کسی کام سے جا رہے تھے کہ باٹا پور کے علاقہ بسی موڑ کے قریب مخالف سمت سے آنے والی ایک تیز رفتار ٹریکٹر ٹرالی نے دونوں کو کچل دیا جبکہ ڈرائیور ٹریکٹر ٹرالی سمیت موقع سے فرار ہو جانے میں کامیاب ہو گیا۔پولیس نے دونوں کو شدید زخمی حالت میں طبی امداد کیلئے مقامی ہسپتال پہنچایا جہاں دونوں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئے تھے۔پولیس نے مقدمہ درج کر کے ضروری کارروائی کے بعد دونوں متوفین کی لاشیں ان کے ورثاء کے حوالے کر دیں۔دونوں کی لاشیں گھر پہنچیں تو کہرام مچ گیا اور ان کے لواحقین دھاڑیں مار مار کر روتے رہے اور ٹریکٹر ٹرالی والے کو بددعائیں دیتے رہے۔ہلاک ہو نے والے دونوں دوستوں کو سینکڑوں سوگوران کی موجودگی میں سپرد خاک کر دیا جبکہ دوسرے واقعہ میں سمن آباد کے علاقہ میں مقامی رہائشی محمد اسلم اپنے3سالہ بیٹے عثمان کو موٹر سائیکل پر بٹھا کر کسی کام کے سلسلہ میں جا رہا تھا کہ اس نے مسلم روڈ پر موٹر سائیکل روک لیا۔اسی دوران پیچھے سے آنے والے تیز رفتار دودھ والے ٹرک نے اسے ٹکر مار دی جس کے نتیجہ میں کمسن عثمان موٹر سائیکل سے اچھل کر ٹرک کے ٹائروں تلے آکر کچلا گیا جبکہ اسکا والد محمد اسلم شدید زخمی ہو گیا تھا۔پولیس نے ٹرک ڈرائیور سرفراز کو حراست میں لیتے ہوئے مقدمہ درج کر کے ٹرک قبضہ میں لے لیا۔پولیس نے ضروری کارروائی کے بعد متوفی بچے کی لاش اس کے ورثاء کے حوالے کر دی۔بچے کی لاش گھر پہنچی تو کہرام مچ گیا اور بچے کی ماں دھاڑیں مار مار کر روتی رہی۔ہلاک ہو نے والے بچے کو سینکڑوں سوگوران کی موجودگی میں سپرد خاک کر دیا گیا۔

مزید : علاقائی