پہلی سے دسویں جماعت تک 41مختلف کتابیں چھاپنے پر ایم ڈی پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ پر اظہار برہمی

پہلی سے دسویں جماعت تک 41مختلف کتابیں چھاپنے پر ایم ڈی پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ پر ...

لاہور(نامہ نگار خصوصی )چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ مسٹر جسٹس اعجاز الاحسن نے عدالتی احکامات نظر انداز کرنے اور طریقہ کار سے ہٹ کرپہلی سے دسویں جماعت تک 41مختلف کتابیں چھاپنے پر ایم ڈی پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ پر اظہار برہمی کرتے ہوئے قرار دیا کہ اگر ثابت ہو گیا کہ عدالتی احکامات کو نظر انداز کیا گیا ہے تو سخت کارروائی کی جائے گی۔درخواست گزاروں کے وکیل سعد رسول نے عدالت کو بتایا کہ سپریم کورٹ کے حکم کے باوجود آٹھویں جماعت کا نیا نصاب شائع کرنے کی بجائے چیئرمین پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ کی ہدائت پر آٹھویں جماعت کا پرانا نصاب شائع کرنے کے لئے بھجوا دیا گیا ہے،ایم ڈی پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ نے عدالت کو بتایا کہ عدالتی حکم کے مطابق اور بورڈ آف گورنرز کی منظوری سے کتب چھپنے کے لئے بھجوائی گئیں جس پر عدالت نے کہا کہ اگر ثابت ہو گیا کہ عدالتی احکامات کو نظر انداز کیا گیا ہے تو سخت کاروائی کی جائے گی.عدالت نے چھاپہ خانے میں بھجوائی گئی کتب کے مینو سکرپٹ کی تفصیلات عدالت میں پیش کرنے کا حکم دے دیاہے۔

اظہار برہمی

مزید : صفحہ آخر