سانحہ سندر ، انکوائری رپورٹ میں 8بیوروکریٹس مالک اور انجینئرز سمیت 12افارد ذمہ دار قرار

سانحہ سندر ، انکوائری رپورٹ میں 8بیوروکریٹس مالک اور انجینئرز سمیت 12افارد ...

لا ہور( خبر نگا ر )سانحہ سندر انڈسٹریل اسٹیٹ کی انکوائری رپورٹ منظر عا م پر آ گئی ۔8 بیوروکریٹس، فیکٹری مالک اورانجینئرز سمیت 12افراد پر حادثے، بلڈنگ کے نقائص اور نگرانی میں غفلت کی ذمہ داری عائد کر دی گئی۔ذرا ئع کے مطا بق سندر انڈسٹریل اسٹیٹ میں زمین بوس ہونے والی عمارت کے بارے میں وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کے حکم پر سیکرٹری انڈسٹریز نبیل جاوید کی سربراہی میں قائم کمیٹی کی رپورٹ منظر عام پر آگئی ہے۔ پندرہ صفحات پر مشتمل اس رپورٹ میں حادثہ اور بلڈنگ کنٹرول میں غفلت کی ذمہ داری 12 افراد پر عائد کی گئی ہے۔ عمارت کے حادثے کی ذمہ داری مالک محمد اشرف، دو انجینئرز اور ماہر تعمیرات پر عائد کی گئی ہے جبکہ بلڈنگ کی تعمیر کی نگرانی، بلڈنگ کنٹرول رولز پر عملدرآمد میں ناکامی اور دیگر امور میں غفلت کی ذمہ داری آٹھ بیوروکریٹس پر عائد کی گئی ہے۔ ان بیور و کریٹس کے خلاف پیڈا ایکٹ 2006ء کے تحت کارروائی کی سفارش کی گئی ہے۔ ان بیوروکریٹس میں محمد اسد عمران،عازب شوکت، محمد اسماعیل، کاشف تنویر، کرنل ریٹائرڈ اشفاق حسین، کرنل ریٹائرڈ بشیر حسین اور قیصر رفیق کے خلاف کارروائی کی سفارش کی گئی ہے۔ مانیٹرنگ اور نگرانی میں غفلت پر انڈسٹریل اسٹیٹ کے بورڈ اور مینجمنٹ کے خلاف بھی کارروائی کا کہا گیا ہے۔حادثے کی وجوہات میں عمارت کا کمزور سٹرکچر، انجینئرنگ اور تعمیراتی نگرانی کے فقدان کا پہلو سامنے آیا ہے۔ انڈسٹریل بلڈنگ ریگولیشن پر عمل نہ ہوا جبکہ زلزلہ بھی عمارت کو کمزور کرنے کا باعث بنا۔ بلڈنگ کنٹرول کے حوالے سے چھ مختلف کمزوریاں سامنے ائی ہیں۔

مزید : صفحہ اول