پاکستانیوں کو تحفظات دور کرنے کے بعد ہی ڈی پورٹ کیا جائیگا : یورپی یونین کی یقین دہانی

پاکستانیوں کو تحفظات دور کرنے کے بعد ہی ڈی پورٹ کیا جائیگا : یورپی یونین کی ...
پاکستانیوں کو تحفظات دور کرنے کے بعد ہی ڈی پورٹ کیا جائیگا : یورپی یونین کی یقین دہانی

  

اسلام آباد (آئی این پی+ اے پی پی) وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا ہے کہ ڈی پورٹیز کو امیگریشن قوانین کی روشنی میں واپس بھیجا جائے، ڈی پورٹ ہونے والوں کے خلاف واضح ثبوت کی فراہمی یقینی بنائی جائے۔ وہ پیر کو یہاں یورپی یونین کے وفد سے ملاقات میں گفتگو کررہے تھے۔ ملاقات میں ڈی پورٹیز کے حوالے سے ری ایڈمیشن معاہدے پر بات چیت کی گئی۔اے پی پی کے مطابق وزیر داخلہ چودھری نثار سے یورپی یونین کے کمشنر برائے مائیگریشن دمیترس اوراموپالس نے پنجاب ہاﺅس میں ملاقات کی اور یورپ سے ڈی پورٹ ہونے والے پاکستانیوں کے مسئلہ پر تبادلہ خیال کیا۔ ملاقات کے دوران فریقین نے اتفاق کیا آئندہ پاکستانی ڈی پورٹیز کو ایک جامع ایس او پی کے تحت پاکستان کے تحفظات کو دور کرکے پاکستان بھیجا جائے گا۔ دونوں اطراف سے اعلیٰ حکام کی ملاقاتوں میں سسٹم آف پروسیجر(ایس او پی)کو حتمی شکل دی جائے گی جس کے تحت یورپ سے پاکستانیوں کو ڈی پورٹ کرنے کیلئے آئندہ عمل کیا جائے گا۔ کمشنر برائے مائیگریشن دمیترس اوراموپالس نے کہا یورپی یونین کو پاکستان کے تحفظات کا احساس ہے جسے باہمی تعاون سے دور کیا جائے گا۔ دونوں اطراف نے دہشت گردی اور انسانی سمگلنگ کی روک تھام کے علاوہ اسلام مخالف پروپیگنڈے سے نمٹنے کیلئے مل کر کام کرنے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔بی بی سی کے مطابق وزارت داخلہ نے کہا ہے غیرقانونی طور پر یورپ جانے والے تارکین وطن کی واپسی کے طریقہ کار سے متعلق پاکستانی حکام اور یورپی یونین کے نمائندہ وفد کے درمیان مذاکرات کامیاب ہو گئے ہیں۔ وزارت داخلہ کے بیان میں کہا گیا یورپی یونین کے وفد کے سربراہ نے واضح کیا ہے کہ مستقبل میں یورپی ملکوں سے ڈیپورٹ کئے جانے والے پاکستانیوں کو ایک واضح طریقہ کار طے کرنے کے بعد پاکستان واپس بھیجا جائیگا۔

مزید : اسلام آباد