پولیس جھوٹے مقدمات درج کرنے پر شرم کرے،سپریم کورٹ نے کالعدم تنظیم کے کارکن کی ضمانت منظور کرلی

پولیس جھوٹے مقدمات درج کرنے پر شرم کرے،سپریم کورٹ نے کالعدم تنظیم کے کارکن ...
پولیس جھوٹے مقدمات درج کرنے پر شرم کرے،سپریم کورٹ نے کالعدم تنظیم کے کارکن کی ضمانت منظور کرلی

لاہور(نامہ نگار خصوصی)سپریم کورٹ نے فوج مخالف مواد تقسیم کرنے کے الزام میں گرفتار ملزم کی درخواست ضمانت منظور کرتے ہوئے رہا کرنے کا حکم دے دیا، درخوست کی سماعت کے دوران عدالت نے ریمارکس دیئے کہ جھوٹے مقدمے درج کرنے والے پولیس اہلکاروں کو شرم آنی چاہیے۔مسٹرجسٹس اعجاز احمد چودھری کی سربراہی میں قائم بنچ نے کیس کی سماعت کی۔ملزم معظم رشید کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ پولیس نے بغیر ثبوت اور گواہوں کے کارروائی کرتے ہوئے ملزم کے خلاف تحفظ پاکستان ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کر دیا لہذا ملزم کی درخواست ضمانت منظور کی جائے۔سرکاری وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ ملزم کے قبضے سے فوج مخالف مواد برآمد ہوا ہے جس پر اس کے خلاف تھانہ سبزہ زار میں مقدمہ درج کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ تحفظ پاکستان ایکٹ کے تحت کوئی بھی ملزم ضمانت کے لئے کسی بھی فورم سے رجوع کرنے کا اختیار نہیں رکھتا۔جس پر عدالت نے ریمارکس دیئے کہ پولیس کی تفتیش کا یہ عالم ہے کہ 11ماہ میں ملزم سے تفتیش میں یہ پتہ نہیں لگایا جا سکا کہ اس نے کن افراد میں مواد تقسیم کیا،کس پبلشر نے مواد چھاپا اور ملزم کوکتاب چھاپنے کے لئے فنڈز کس نے دئیے۔ جھوٹے مقدمے درج کرنے والے پولیس اہلکاروں کو شرم آنے چاہیے۔عدالت نے ملزم کی درخواست ضمانت منظور کرتے ہوئے ملزم معظم رشید کو فوری طور پر رہا کرنے کے احکامات صادر کر دئیے۔

مزید : لاہور

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...