چائلڈ لیبر کی خلافورزی پر بلاامتیاز کارروائی ہو گی،راجہ اشفاق سرور

چائلڈ لیبر کی خلافورزی پر بلاامتیاز کارروائی ہو گی،راجہ اشفاق سرور

لاہور( خبرنگار) صوبائی وزیر محنت وانسانی وسائل راجہ اشفاق سرورنے کہاہے کہ 14سال سے کم عمر بچوں سے مشقت قانونا جرم ہے۔اینٹوں کے بھٹوں سے کم عمر بچوں کی مشقت کا مستقل بنیادوں پر خاتمہ یقینی بنانے کے لئے’’ممانعت کے قانون2016ء ‘‘کی پنجاب اسمبلی سے منظوری کے بعد اب صوبہ بھر کے ضلعی لیبر افسران، اسسٹنٹ ڈائریکٹرز لیبر، ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کلکٹرز ، اسسٹنٹ کمشنرز، ڈی پی اوز اور ایس ڈی پی اوز کو بھٹہ خشت کے معائنے کے اختیارات تفویض کردئیے گئے ہیں جن کے تحت یہ ٹیمیں بھٹہ خشت کی بلاامتیاز انسپکشن کر کے خلاف ورزی کے مرتکب افراد کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائیں گی۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روزایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ڈی جی لیبر محمد سلیم حسین نے کہاکہ چائلڈ لیبر قانون کی خلاف ورزی کرنے و الو ں کے خلاف پہلے سے ہی کارروائیاں جاری ہیں جن کے نتیجے میں صوبہ پنجاب کے بھٹہ خشت سے چائلڈ لیبر کا تقریبا خاتمہ ہو چکاہے اور 70ہزار سے زائد بچوں کو سرکاری،این جی اوز کے تعلیمی اداروں اور پنجاب ایجوکیشن فاؤنڈیشن کے پارٹنر سکولوں میں تعلیم دی جا رہی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1