سماجی و معاشی ترقی والے منصوبوں کی فنڈنگ کررہے ہیں،گراہم ہیریسن

  سماجی و معاشی ترقی والے منصوبوں کی فنڈنگ کررہے ہیں،گراہم ہیریسن

  



لاہور (لیڈی رپورٹر) ورلڈ بینک کے نمائندے ڈاکٹر گراہم ہیریسن نے کہا ہے کہ ایسے منصوبوں کی فنڈنگ کر رہے ہیں جو سماجی و معاشی ترقی میں اپنا کردار ادا کر سکیں وہ پنجاب یونیورسٹی آفس آف ریسرچ انوویشن اینڈ کمرشلائزیشن اور ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے زیر اہتمام’تحقیق و ترقی کے نئے لائحہ عمل‘ پرالرازی ہال میں ورکشاپ سے سکائپ کے ذریعے خطاب کررہے تھے۔ اس موقع پر پنجاب یونیورسٹی ڈین فیکلٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی پروفیسر ڈاکٹر تقی زاہد بٹ، ایچ ای سی کے ڈائریکٹر جنرل آر اینڈ ڈی زین العابدین،پنجاب یونیورسٹی اورک کے ڈائریکٹر ڈاکٹر ارشد جاوید، برٹش کونسل کی نمائندہ ہاجرہ خان سمیت پنجاب کی تمام جامعات سے نمائندوں نے شرکت کی۔اپنے خطاب میں ڈاکٹر گراہم ہیریسن نے کہا کہ ٹیکنالوجی ٹرانسفر، انوویشن اور انٹرپینورشپ کے کلچر کو فروغ دینے والے منصوبوں کی حوصلہ افزائی کریں گے۔ ڈاکٹر گراہم ہیریسن نے کہا کہ ورلڈ بینک ہائیر ایجوکیشن کمیشن کو آئندہ پانچ سال کے لئے 400 ملین ڈالرز دے گا۔ انہوں نے کہاکہ سماجی و معاشی ترقی کے لئے ایسے منصوبوں کو فروغ دیں جو ایس جی ڈیز حاصل کرنے میں مدد دیں۔انہوں نے کہا کہ مقامی مسائل حل کرنے والے تحقیقی منصوبوں کے لئے آئندہ تین سال کے لئے 7 لاکھ ڈالر مختص کئے ہیں۔اپنے خطاب میں پروفیسر ڈاکٹر تقی زاہد بٹ نے کہا کہ ورکشاپ سے جامعات میں نالج شئیرنگ ریسرچ کلچر کو فروغ ملے گا۔ انہوں نے کہا کہ ایچ ای سی کی کوششوں سے انڈسٹریل اور کارپوریٹ سیکٹر سے روابط کو فروغ مل رہا ہے۔ انہوں نے جامعات میں تحقیق کے فروغ کیلئے ایچ ای سی کے کردار کو سراہا۔ انہوں نے کہا کہ سماجی و معاشی ترقی میں اکیڈیمیا کا کردار اہم ہے۔ڈاکٹر زین العابدین نے کہا کہ ہائیر ایجوکیشن کمیشن 127 ملین ڈالر کی تحقیقاتی گرانٹ دے گا۔انہوں نے ایچ ای سی کی گرانٹ سے چلنے والے مختلف تحقیقی پروگراموں پر تفصیلی پریزینٹیشن دی۔ حاجرہ خان نے پاک برطانیہ ایجوکیشن گیٹ وے پر تفصیلی روشنی ڈالی۔پنجاب یونیورسٹی اورک کے ڈائریکٹر ڈاکٹر ارشد جاوید نے کہا کہ ورکشاپ سے محققین کو تحقیقی منصوبوں کیلئے دستیاب تحقیقی گرانٹ کے بارے میں آگاہی ملے گی۔بعد ازاں سوالوں و جواب کا سیشن ہوا۔

گراہم ہیریسن

مزید : میٹروپولیٹن 1