ہومیو پیتھک ایسوسی ایشن کافارم(7) کے حصول کیلئے عدالت سے رجوع

  ہومیو پیتھک ایسوسی ایشن کافارم(7) کے حصول کیلئے عدالت سے رجوع

  



اسلام آباد(پ ر)آل پاکستان ہومیو پیتھک ا یسوسی ایشن (APHMA) کے چیئر مین ڈاکٹر محمد زبیر قریشی نے فارم (7)کے حصول کے لیے اسلام آباد ہائی کورٹ سے رجوع کرلیا،عدالت نے قپٹیشن کو منظور کرکے فر یقین کو نوٹس جاری کردی،ڈریپ ایکٹ (2012) کے تحت متبادل ادویات جس میں ہو میو پیتھک ادویات بھی شامل تھی،وہ انلسمینٹ کیلئے ضروری قرار دیا۔ ڈریپ نے (2014)میں اشتہارات کے ذریعے الٹر نیٹو میڈیسن کے ادویات بنانے والے اور درآمد کنندہ گان کوہدایت کی کے وہ انلسمنٹ کے لیے مقررہ فیس ادا کرکے انلسمنٹ حاصل کرے،مگرپانچ سال کا طوعرصہ گزرنے کے باوجود ڈریپ نے کمپاؤنڈ ادویات کے فارم(7)جاری نہیں کئے،جس نہ صرف اندرون ملک بلکہ بیرون ملک بھی برآمدبری طرح متاثر ہوئی،جس سے پاکستان کے زرمباد لہ کو انتہائی نقصان پہنچا، قانون دان احسان احمد کھوکھر کی جانب سے رٹ دائر کی گئی۔ انلسمنٹ رول کے حوالے سے تیکنیکی معاونت (ڈریپ ایکٹ)کے ماہر خالد محمد نے کی۔اسلام آباد ہائی کورٹ نے (ڈریپ) کو نوٹس جاری کرتے ہوئے اگلی سماعت تک کسی بھی کارروائی سے روک دیاہے۔انلسمنٹ رول کے سامنے آتے ہی طاقتوار ڈرگ مافیا حرکت میں آگیا،اور من پسند لوگوں کو نوازا جانے لگا اور چھوٹے پیمانے پر کام کرنے والے لوگوں کے لئے بہت سی مشکلات پیدا کردیں جس سے وہ تنگ آکر اپنا کاروبار بند کرنے پر مجبور ہوگئے جبکہ درامد کننددگان کو سہولت دی گئی، قانون آسان بنادئے گئے۔ عاصم رؤف نے سی ای او کا چارج لیتے ہی ہنگامی اقدامات کئے لیکن طاقتوار ڈرگ مافیاں کو یہ اقدامات زیادہ پسند نہیں آے اور میٹنگ ہونے کا عمل بد ترین آہستہ ہوتا چلا گیا اب پچھلے کئی مہینوں سے میٹنگ ہونے کی رفتار انتہائی کم ہوگئی ہے۔

ڈریپ،نوٹس

مزید : علاقائی