امریکہ‘اکرام بسرا کے ڈرامہ ’وی ور آل سنفلاورز‘پر دھوم

امریکہ‘اکرام بسرا کے ڈرامہ ’وی ور آل سنفلاورز‘پر دھوم
 امریکہ‘اکرام بسرا کے ڈرامہ ’وی ور آل سنفلاورز‘پر دھوم

  



لاہور (فلم رپورٹر)امریکی ریاست آیوا کے ایلن میک وی تھیٹر میں پاکستانی ڈرامہ نگار اکرام بسرا کے ڈرامہ وی ور آل سنفلاورز پر پرفارمنس پیش کی گئی۔ ڈرامہ میں دکھایا گیا کہ کیسے ادھم سنگھ جلیانوالہ باغ میں قتل ہونے والے سینکڑوں معصوم لوگوں کا بدلہ لینے کو زندگی کا مقصد بنا لیتے ہیں۔ اور بالآخر بیس سال بعد انگلستان جا کر مائکل اوڈائر کو قتل کرتے ہیں۔جو جلیانوالہ میں قتل عام کے وقت پنجاب کا گورنر تھا اور زندگی بھر اس بات پر فحر کرتارہا کہ اس نے کبھی برطانیہ کا پرچم نگوں نہیں ہونے دیا۔ڈرامے میں پہلی جنگِ عظیم کے بعد عالمی سطح پر ہونے والی سیاسی پیش رفت اور تبدیلیوں کا حوالہ دیتے ہوئے دکھایا گیا ہے کہ کیسے انگریز سرکار اپنی سہولت کے لیے برِصغیر کے لوگوں کا استحصال کرتی رہی۔ہندو مسلم تنازعات کو ہوا دے کر کسیے مقامی لوگوں کو اپنا آلہ کار بناتی رہی۔ڈرامے میں مٹی اور گِدھوں کے افسانوی کردار بھی شامل کئے گئے ہیں جو اس بات کی علامت ہیں کہ کیسے انگریز نے اس وقت لوگوں کا حق چھین کر ان کے مال ودولت پر قبضہ جمایا۔امریکی ناظرین کے لئے ڈرامہ ایک دلچسپ تجربہ رہا جس سے انہیں برطانوی راج کے ظلم وستم اور برصضیر کی تاریح کو سمجھنے کا موقع ملا۔اکرام بسرا کا پاکستان میں سکرپٹ ایڈیٹر اور پروڈیسر کی حیثیت سے الیکٹرونک میڈیا سے وابستہ رہے اور آجکل امریکہ میں اپنے اگلے سٹیج ڈرامے پر کام کرہے ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ مشرق اور مغرب میں بہتر تعاون اور انڈرسٹینڈنگ کے لیے یہ بہت ضروری ہے کہ یہاں اپنے خطے کی تاریح اور کہانیوں کو متعارف کروایا جائے۔

مزید : کلچر