سردار رضا خان کا نئے چیف الیکشن کمشنر کی تعیناتی کیلئے سیکرٹری پارلیمانی امور کو خط ارسال

سردار رضا خان کا نئے چیف الیکشن کمشنر کی تعیناتی کیلئے سیکرٹری پارلیمانی ...

  



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)الیکشن کمیشن آف پاکستان کے سربراہ جسٹس (ر) سردار رضا خان نے نئے چیف الیکشن کمشنر کی تعیناتی کیلئے سیکرٹری پارلیمانی امور کو خط لکھ دیا۔ پارلیمانی امور کے ذرائع کے مطابق چیف الیکشن کمشنر نے سیکریٹری پارلیمانی امورکے نام خط میں لکھا ہے کہ حکومت نئے چیف الیکشن کمشنر کی تعیناتی کیلئے اقدامات کرے۔ذرائع کاکہناہے کہ نئے چیف الیکشن کمشنر کے عہدے کا بروقت تقرر نہ کیے جانے کی صورت میں 7 دسمبرکو الیکشن کمیشن غیرفعال ہوجائیگا کیونکہ کمیشن کے سندھ اور بلوچستان سے 2 ممبران پہلے ہی ریٹائر ہو چکے ہیں۔الیکشن کمیشن، چیف الیکشن کمشنر اور 2 ارکان کی عدم موجودگی میں کوئی فیصلہ نہیں کر سکے گا، الیکشن کمیشن ضمنی الیکشن اور بلدیاتی انتخابات بھی نہیں کراسکے گا جبکہ انتخابی فہرستوں کا معاملہ بھی متاثر ہونے کا خدشہ ہے۔ قانون کے تحت الیکشن کمیشن اپنے تین ارکان کے ساتھ فعال رہ سکتا ہے جبکہ چیف الیکشن کمشنر سمیت ارکان کی مجموعی تعداد 5 ہے۔آئین کے تحت چیف الیکشن کمشنر اور ممبران کی تعیناتی کے لیے وزیراعظم اور قائد حزب اختلاف باہمی مشاورت سے 3 نام پارلیمانی کمیٹی کو بھجواتے ہیں، الیکشن کمشنر کا عہدہ خالی ہونے پر 45 روز کے اندرپُر کیا جانا چاہئے۔دوسری جانب پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) غیرملکی فنڈنگ کیس کے دوران الیکشن کمیشن کا وضاحتی بیان سامنے آ گیا ہے۔الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی غیرملکی فنڈنگ کیس 15 روز میں نمٹانے کا کوئی فیصلہ نہیں ہوا، پی ٹی آئی غیرملکی فنڈنگ کیس روزانہ کی بنیاد پر سننے کا حکم دیا گیا ہے، چیف الیکشن کمشنر نے 15 روز میں معاملہ نمٹانے سے متعلق کوئی بات نہیں کی۔

سردار رضا/وضاحت

مزید : صفحہ اول