حکومت کے اشتعال انگیز بیانات سے جمہوریت کی گاڑی ڈی ریل ہو سکتی ہے:سراج الحق

حکومت کے اشتعال انگیز بیانات سے جمہوریت کی گاڑی ڈی ریل ہو سکتی ہے:سراج الحق

  



لاہور(این این آئی)امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ حکومت کے اشتعال انگیزبیانات کی وجہ سے جمہوریت کی گاڑی ڈی ریل ہوسکتی ہے، حکمران اپنی نااہلی اور نالائقی کو چھپانے کیلئے سیاسی انتشار کو جان بوجھ کر ہوا دے رہے ہیں،اس سیاسی انتشار کا سب سے زیادہ فائدہ ہندوستان اور نقصان کشمیر کو ہورہا ہے،حکومت کو کشمیر کی تحریک آزادی کیلئے متفقہ قومی موقف سے انحراف نہیں کرنے دیں گے،80لاکھ کشمیری 111دنوں سے بدترین محاصرے کا شکار ہیں اور ہمارے حکمرانوں نے مجرمانہ خاموشی اختیار کررکھی ہے،ٹرمپ سے امیدیں رکھنے والوں کے ہاتھ پہلے کچھ آیا ہے نہ آئندہ آئے گا، حکمرانوں کو ووٹ اور سپورٹ کرنے والے اب ان سے نجات کی دعائیں کررہے ہیں، حکومت کی ناکام معاشی پالیسیوں کی وجہ سے لوگ اب جمہوریت کو کوستے ہیں،ان پالیسیوں کی وجہ سے رزق حلال کے دروازے بند ہوگئے ہیں اور عام آدمی نان شبینہ کا محتاج ہوگیا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ میں جاری مرکزی تربیت گاہ کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ حکمرانوں کا رویہ شکست خوردگی کی علامت ہے۔حکمرانوں نے 22کروڑ پاکستانیوں کے ساتھ ساتھ کشمیر یوں کو بھی سخت مایوس کیا ہے۔اقوام متحدہ میں کئی گئی تقریر کو دوماہ ہونے کو آئے ہیں مگر کوئی ایک بھی عملی قدم نہیں اٹھایا گیا جو حکمرانوں کی سنجیدگی کا پتہ دیتاہو۔ایک طرف مودی کشمیر پر اپنے قبضہ کو مستقل کرنے کیلئے روزانہ نئے اقدامات کررہا ہے،حریت راہنماؤں کو جیلوں میں بند کرنے کے بعد ان کی جائیدادوں پر بھی قبضہ کرلیا گیا ہے،مساجد اور مدارس کو مسمار کرکے ان کی جگہ مندر بنائے جارہے ہیں،مسلمانوں کی یادگاروں کو ہندوؤں سے منسوب کیا جارہا ہے۔معیشت کا بیڑا غرق کرنے والے سابقہ اور موجودہ حکمرانوں کی معاشی پالیسیوں میں کوئی فرق نہیں۔ انہوں نے کہا کہ مہنگائی بے روز گاری اور بدامنی نے عوام کی زندگی اجیرن کردی ہے۔حکومت نے عام آدمی سے زندہ رہنے کا حق چھین لیا ہے۔

سراج الحق

مزید : صفحہ آخر