آل فاٹا گرینڈ جرگہ کافاٹا کو پرانے نظام پر بحال کرنے کیلئے عدالت رجوع کا عندیہ

آل فاٹا گرینڈ جرگہ کافاٹا کو پرانے نظام پر بحال کرنے کیلئے عدالت رجوع کا ...

  



بنوں (بیوروچیف) آل فاٹا گرینڈ جرگہ نے فاٹا انضمام کے خاتمے اور فاٹا کو پُرانے نظام پر بحال کرنے کیلئے سپریم کورٹ اور ہائی کورٹ میں چیلنج کرنے کا عندیہ دیدیا انضمام کا بیرونی ایجنڈا بابائے قوم کے نافذ کردہ کو مسخ کرنے کے مترداف قرار دے دیا بنوں ٹاؤن شپ میں آل فاٹا قبائل کا ایک گرینڈ جرگہ زیر صدارت انجینئر فیاض داؤڑ منعقد ہوا جرگہ میں عمائدین فاٹا کے علاوہ وزیرستان کے قبائل نے کثیر تعداد میں شرکت کی گرینڈ جرگہ سے انجینئر فیاض داؤڑ، ثاقب نواز باجوڑی، حبیب نواز مہمند، ناصر اقبال آفریدی، گل دراز اورکزئی، عصمت اللہ کرم، جان عالم محسود، عجب نور اور دیگر مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ فاٹا کے قبائل پر یہودی ایجنڈا کے تحت دہشتگردی کے بہانے جو لا محدود جانی مالی نقصانات سے دوچار کیا گیا تاریخ سابقہ اور موجودہ حکمرانوں کو کبھی معاف نہیں کرے گی کیونکہ پاکستان کی آزادی، کشمیری مسلمانوں کو بھارتی جارحیت سے آزاد کرانے اور بھارت کے خلاف سیسہ پلائی دیوار بن کر افواج پاکستان کو کامیابی میں مکمل ساتھ دیا آج فاٹا کے مجاہدین سے برطانیہ اور امریکہ بدلہ لیکر ان عظیم قربانیوں کو خاک میں ملانے کی منصوبہ بندی کررہی ہے جس کی وجہ سے قبائلی عوام آبائی علاقوں سے مختلف اضلاع میں غلامانہ زندگی بسر کرنے پر مجبور کئے سپریم کورٹ اور ہائی کورٹ کی معزز عدالتیں قبائلیوں کو پُرانے حال پر چھوڑ کر آزاد ریاست میں زندگی بسر کرنے کا حق دیں اور اس حق کیلئے بہت جلد قبائل عدالتوں میں اپیل دائر کریں گے مقررین نے کہا کہ سابقہ وزیراعظم نے نامعلوم وجوہات کی بناء پر اسمبلی سے جو بیرونی ایجنڈا کے تحت نامکمل فاٹا انضمام کا بل پاس کرکے چھوڑا لیکن ایک طرف موجودہ حکومت سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کے خلاف تحقیقات کرنے کے درپے ہیں اور دوسری طرف اس کا رائج شدہ انضمام کا بل فاٹا پر حاوی کرکے تمام قبائلی عوام کے جذبات کو مجروح کئے جس کیلئے قبائل نہ پہلے تیار تھے اور نہ مشاورت کیلئے اب تیار ہیں ہم وزیراعظم سے اپیل کرتے ہیں کہ ہم کو عظیم قربانیوں اور محب وطن قبائل ہونے کا صلہ دیکر ہم کو بابائے قوم کے نافذکردہ آئین وقانون پر زندگی بسر کرنے کا حق دیا جائے ورنہ قبائل مجبور ہیں کہ آرٹیکل 6 کے تحت کسی بھی ہمسایہ ملک میں ہجرت کریں لہذا ان سنگین حالات میں دشمن ممالک کو مزید قوم کو بڑکھانے کا موقع نہ دیں اور ان کے خلاف قبائلی مجاہدین کو اعتماد میں لیکر کشمیر کے مسلمانوں کو ایک بار پھر مودی سرکار کی بربریت اور جارحیت سے آزاد کرائیں  

مزید : پشاورصفحہ آخر