سبحان اللہ، اگر وزن میں کمی اور بہترین صحت کی خواہش ہے تو اس سنت نبوی ﷺپر عمل شروع کردیں، سائنسدانوں نے بھی مشورہ دے دیا

سبحان اللہ، اگر وزن میں کمی اور بہترین صحت کی خواہش ہے تو اس سنت نبوی ﷺپر عمل ...
سبحان اللہ، اگر وزن میں کمی اور بہترین صحت کی خواہش ہے تو اس سنت نبوی ﷺپر عمل شروع کردیں، سائنسدانوں نے بھی مشورہ دے دیا

  



لندن(نیوزڈیسک)ماہ رمضان کے علاوہ عام دنوں میں روزہ رکھنا نبی کریم ﷺکی سنت ہے اور تمام مسلمان آپﷺکی سنت سے بہت محبت رکھتے ہیں اور اس پر عمل کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔لیکن اب مغربی دنیا بھی آپ ﷺکی سنتوں کی معترف ہوتی جارہی ہے ۔

سائنسدانوں نے دنیا کو مشورہ دیا ہے کہ اگر وہ وزن میں کمی کرنا چاہتے ہیں اور بہترین صحت کی خواہش رکھتے ہیں تو انہیں چاہیے کہ وہ ہفتے میں کم از کم دو دن ضرور روزہ رکھیں۔اس نسخہ کو ماہرین نے 5:2کا نام دیا ہے یعنی پانچ دن عام طریقے کھا پی کر گزاریں اوردودن روزہ رکھیں کہ اس سے معدے پر بہت اچھے اثرات مرتب ہوں گے۔ٹی وی پروگرام کے میزبان اور برطانوی ماہر ڈاکٹرمائیکل موسلے کا کہنا ہے کہ اس نے خود یہ فارمولاآزمایا ہے اور اسے وزن کم کرنے میں انتہائی مفید پایا ہے۔موسلی کا کہنا ہے کہ اس نے کئی تحقیقات پڑھیں اور وزن کم کرنے کے لئے کئی طریقے آزمائے لیکن جو فائدہ اسے دو دن کم کھانے یا روزہ رکھنے سے ہوا وہ ناقابل یقین تھا۔اس کا کہنا ہے کہ اس طریقہ پر عمل کرکے اس نے صرف 9ہفتوں میں9کلو وزن کم کرلیا۔اس کا کہنا ہے کہ پانچ دن آپ چاہیں تو نارمل خوراک لیں لیکن دو دن آپ کے حراروں کی تعداد500سے زیادہ نہیں ہونی چاہیے۔

سائنسدان اس کی توجیح یہ پیش کرتے ہیں کہ ہمارے جسم میں لیپٹین،گھرلین اور انسولین کے ایک خاص لیول پر ہوتے ہیں۔جب یہ حراروں میں تبدیل ہوتے ہیں تو ان کا لیول کم ہوتا ہے اور ہمیں بھوک لگتی ہے لیکن موٹے افراد میں ان کا لیول کم ہی رہتا ہے اور انہیں ہر وقت بھوک لگتی رہتی ہے۔اگر آپ دو دن روزہ رکھیں گے یا بہت ہی کم کھائیں گے تو انسولین اور لیپٹین کا لیول ٹھیک رہے گا جس کی وجہ سے آپ کو بھوک کم لگے گی اوروزن کم ہونے لگے گا۔اس طریقے کا سب سے بڑا فائدہ یہ ہوگا کہ آپ دل کی بیماریوں سے محفوظ رہیں گے،ذیابیطس کا خطرہ کم ہوگااور ساتھ ہی خون میں کیمیائی مادوں کا لیول نارمل رہے گا جس کی وجہ سے آپ کا جسم کئی خطرناک بیماریوں سے بچا رہے گا۔

مزید : تعلیم و صحت