نمرتا ہلاکت کیس،ڈی این اے رپورٹ جوڈیشل انکوائری کو موصول، لاڑکانہ پولیس کی لاپرواہی ظاہر

نمرتا ہلاکت کیس،ڈی این اے رپورٹ جوڈیشل انکوائری کو موصول، لاڑکانہ پولیس کی ...
نمرتا ہلاکت کیس،ڈی این اے رپورٹ جوڈیشل انکوائری کو موصول، لاڑکانہ پولیس کی لاپرواہی ظاہر

  



لاڑکانہ (ڈیلی پاکستان آن لائن)لاہورفرانزک لیب نے نمرتا ہلاکت کیس میں لاڑکانہ پولیس کی لاپرواہی کو ظاہر کردیا۔

نجی ٹی وی 92 نیوز کے مطابق نمرتا کے گلے میں بندھے ڈوپٹے کی ڈی این اے رپورٹ جوڈیشل انکوائری کو موصول ہو گئی جس میں لاہورفرانزک لیب نے لاڑکانہ پولیس کی لاپرواہی کو ظاہر کردیا،رپورٹ کے مطابق ڈوپٹے سے کسی قسم کے سکن ٹشوز یا خون کے نشان نہیں ملے .

ذرائع کا کہنا ہے کہ پولیس نے نمرتا کے گلے میں بندھا ڈوپٹہ تاخیر سے بھیجا،ڈوپٹہ تاخیر سے بھیجنے کے باعث ڈی این اے نہیں مل سکا، ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ ڈوپٹے کی رپورٹ پولیس کی جانب سے جوڈیشل انکوائری کو پیش کردی گئی،ماہرین کا کہنا ہے کہ کپڑے پر واقعے کے 72 گھنٹے بعد تک سکن ٹشوز سے ڈی این اے لیا جا سکتا تھا ،نمرتا کے ناخن ڈی این اے کیلئے بھیجے جانا ضروری تھا۔

مزید : علاقائی /سندھ /لاڑکانہ