اجازت کے بغیر بچہ پیدا کرنے پر خاتون شوہر کیخلاف عدالت پہنچ گئی

اجازت کے بغیر بچہ پیدا کرنے پر خاتون شوہر کیخلاف عدالت پہنچ گئی
اجازت کے بغیر بچہ پیدا کرنے پر خاتون شوہر کیخلاف عدالت پہنچ گئی

  



دبئی(مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ عرب امارات میں ایک بھارتی شخص نے اپنی بیوی کی اجازت کے بغیر بچہ پیدا کر لیا، جس پر خاتون طلاق کے لیے عدالت پہنچ گئی۔ خلیج ٹائمز کے مطابق اس بھارتی جوڑے کی شادی کو 15سال ہو گئے تھے تاہم ان کے ہاں اولاد پیدا نہ ہوئی اور ڈاکٹروں نے 37سالہ خاتون کو بانجھ قرار دے دیا تھا۔ اس پر شوہر نے ایک اور خاتون کی بطور سروگیٹ (متبادل ماں)خدمات حاصل کیں۔ اس نے آئی وی ایف کے ذریعے اپنے سپرمز دے کر اس خاتون کے ذریعے ایک بچی پیدا کر لی۔

بچی پیدا ہونے کے بعد اس شخص نے بچی کی رجسٹریشن کراتے ہوئے ماں کے خانے میں اپنی بیوی کا نام لکھوا دیا۔ جب اس کی بیوی کو اس بارے علم ہوا تو اس نے طلاق کے لیے عدالت سے رجوع کر لیا جہاں سے اب خاتون کے حق میں فیصلہ دے دیا گیا ہے۔ خاتون کا کہنا تھا کہ اس نے پہلے بھارت میں طلاق کے لیے کیس دائر کیا لیکن بھارتی عدالت نے اس کا موقف مسترد کر دیا اور طلاق نہیں دلوائی۔ جب وہ واپس متحدہ عرب امارات آئے تو اس نے وہاں دوبارہ کیس کر دیا۔ رپورٹ کے مطابق یہ متحدہ عرب امارات کی تاریخ میںاپنی نوعیت کا پہلا کیس تھا۔

مزید : عرب دنیا