شادی سے قبل پارٹی ، دولہا نے انتظامات کی ذمہ داری دلہن کو سونپ دی لیکن پھر دلہن نے ایسا کام کردیا کہ کوئی سوچ بھی نہ سکتا تھا

شادی سے قبل پارٹی ، دولہا نے انتظامات کی ذمہ داری دلہن کو سونپ دی لیکن پھر ...
شادی سے قبل پارٹی ، دولہا نے انتظامات کی ذمہ داری دلہن کو سونپ دی لیکن پھر دلہن نے ایسا کام کردیا کہ کوئی سوچ بھی نہ سکتا تھا

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک شخص نے شادی سے قبل اپنے دوستوں کے ساتھ سپین کے جزیرے ایبیزا پر پارٹی کرنے کا پروگرام بنایا۔ اس کی ہونے والی دلہن نے پارٹی کے انتظامات خود کرنے کی فرمائش کی جس پر اس شخص نے بخوشی یہ ذمہ داری اسے سونپ دی لیکن دلہن اپنے دولہا اور اس کے دوستوں کے ساتھ ایسا ہاتھ کر گئی کہ کوئی سوچ بھی نہ سکتا تھا۔

میل آن لائن کے مطابق 32سالہ ریچل ڈورن اور 30سالہ کرس میہون کی چند روز بعد شادی ہونے جا رہی تھی جس پر دولہا کرس میہون نے اپنے 30دوستوں کے ساتھ ایبیزا جزیرے پر سٹیگ پارٹی کا پروگرام بنایا گیا۔

ریچل نے پارٹی کے انتظامات اپنے ہاتھ میں لیے، دولہا اور اس کے دوستوں سے فی کس 440پاﺅنڈ لے کر انہیں بورڈنگ پاس، ٹکٹ اور ہوٹل کی بکنگ کی رسیدیں دے دیں۔ تمام دوست مقرر وقت پر بریڈ فورڈ ایئرپورٹ پہنچے اور اپنے بورڈنگ پاس پیش کیے تو حکام نے انہیں بتایا کہ یہ بورڈنگ پاس جعلی ہیں جس پر وہ سٹپٹا کر رہ گئے۔

انہوں نے اس ہوٹل کو فون کیا جہاں ریچل نے ان کے لیے بکنگ کروا رکھی تھی۔ ہوٹل والوں نے جواب دیا کہ ان کے ہاں ان ناموں سے کوئی بکنگ نہیں کروائی گئی۔ اس پر انہیں معلوم ہوا کہ ریچل ان کے ساتھ ہاتھ کر گئی ہے۔ جب کرس میہون گھر واپس پہنچا تو ریچل جمع ہونے والی 13ہزار پاﺅنڈ (25لاکھ 98ہزار روپے) کی رقم کے ساتھ روپوش ہو چکی تھی۔ میہون نے پولیس کو رپورٹ کی جس نے کئی ہفتے کی جدوجہد کے بعد ریچل کو گرفتار کرکے کارآئیل کراﺅن کورٹ میں پیش کر دیا جہاں سے اب اسے 15ماہ قید کی سزا سنا کر جیل بھجوا دیاگیا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس