قرآن پاک کی بے حرمتی کا معاملہ، ناروے کی حکومت کا موقف بھی آگیا، واضح اعلان کردیا

قرآن پاک کی بے حرمتی کا معاملہ، ناروے کی حکومت کا موقف بھی آگیا، واضح اعلان ...
قرآن پاک کی بے حرمتی کا معاملہ، ناروے کی حکومت کا موقف بھی آگیا، واضح اعلان کردیا

  



اسلام آباد، اوسلو(ڈیلی پاکستان آن لائن) ناروے میں قرآن پاک کی بے حرمتی کی کوشش اور ریلی نکالے جانے پر ناروے کی حکومت کا موقف بھی آگیا اور پاکستان میں تعینا ت ناروے کے سفیر نے کہا ہے کہ ناروے کی حکومت اس واقعہ کی شدید مذمت کرتی ہے  اور پولیس نے سیکیورٹی صورتحال کی وجہ سے مظاہرے کو روکا۔

دنیا نیوز کے مطابق سفیر کاکہناتھاکہ ناروےمیں ہرشخص کواپنےمذہب کےمطابق زندگی گزارنےکی اجازت ہے تاہم ایسی حرکات کو سختی سے مسترد کرتی ہے۔ ادھر اے آر وائے نیوز کے مطابق ناروے کی  حکومت نے پولیس کو قرآن پاک کی بے حرمتی روکنے کو لازمی قراردیدیا اور پولیس کو حکم دیا ہے کہ وہ ایسے قبیح فعل کو روکیں۔ یادرہے کہ شدت پسند تنظیم کی طرف سے ریلی نکالی گئی تھی اور اس دوران اس قبیح حرکت کی کوشش کی گئی لیکن مظاہرین میں شامل ایک نوجوان نے اس کوشش کو ناکام بنا دیا تھا۔ 

سفیر کے بیان سے قبل قرآن پاک کی بے حرمتی کے خلاف احتجاج ریکارڈ کرانے کے لیے اسلام آباد میں تعینات ناروے کے سفیر کو کل دفتر خارجہ طلب کیا گیا تھا۔دفتر خارجہ سے جاری بیان کے مطابق ناروے کے سفیر پر واضع کر دیا گیا کہ قرآن پاک کی بے حرمتی پر پاکستان کی حکومت اور عوام کو شدید تشویش ہے۔پاکستان ناروے کے شہر میں ہونے والی بے حرمتی کی واقعہ کی مذمت کرتا ہے۔ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق ایسے واقعات ایک ارب تیس کروڑ مسلمانوں کے جذبات کو مجروع کرتے ہیں۔ پاکستان ناروے حکومت سے ذمہ داروں کوکٹہرےمیں لانےکا مطالبہ کرتا ہے۔ مستقبل میں ایسے واقعات کی روک تھام کیلئے ذمہ داروں کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے۔

مزید : بین الاقوامی