حکومتی دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے، پاکستانی معیشت کے بارے میں سب سے تشویشناک خبر آگئی

حکومتی دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے، پاکستانی معیشت کے بارے میں سب سے تشویشناک ...
حکومتی دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے، پاکستانی معیشت کے بارے میں سب سے تشویشناک خبر آگئی

  



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان میں لارج سکیل مینوفیکچرنگ کے شعبے میں مسلسل چھٹے ماہ بھی ریکارڈ گراوٹ دیکھی گئی اور مستقبل قریب میں بھی شعبے میں ترقی کا کوئی واضح امکان نظر نہیں آ رہا۔ ڈان ڈاٹ کام کے مطابق ادارہ شماریات پاکستان کی طرف سے جاری کی گئی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ مالی سال 2019-20ءکے تیسرے مہینے میں لارج سکیل مینوفیکچرنگ کے شعبے میں 5.63فیصد گراوٹ ریکارڈ کی گئی، جبکہ اسی مہینے میں بڑی صنعت بھی 5.91فیصد مزید نیچے گر گئی۔

رپورٹ کے مطابق مالی سال 2018-19ءمیں لارج سکیل مینوفیکچرنگ میں ترقی کا ہدف 8.1فیصد مقرر کیا گیا تھا لیکن اس کے برعکس شعبے میں 3.6فیصد تنزلی ہوئی۔ مالی سال 2019-20ءمیں اس شعبے میں ترقی کا ہدف ہی محض 3.1فیصد مقرر کیا گیا تھا لیکن وہ بھی پورا ہوتا نظر نہیں آ رہا۔ تازہ ترین ماہانہ گراوٹ سب سے زیادہ الیکٹرانک مصنوعات میں ہوئی جو 21.53فیصد تھی۔ اس کے بعد آئرن اینڈ سٹیل مصنوعات میں 17.87فیصد، پٹرولیم مصنوعات میں 7.82فیصد اور کیمیکلز میں 4.97فیصد گراوٹ ہوئی۔

ٹریکٹر کی پیداوار میں 20.32فیصد، ٹرکوںکی پیداوار میں 64.75فیصد، بسوں کی پیداوار میں 52.70فیصد، جیپوں اور کاروں میں 92.98فیصد، ایل سی ویز میں 25.37فیصد اور موٹرسائیکلوں کی پیداوار میں 25.69فیصد کمی واقع ہوئی۔ واضح رہے کہ لارج سکیل مینوفیکچرنگ کا شعبہ ملک کی تمام مینوفیکچرنگ کا 80فیصد ہے اور ملک کے مجموعی جی ڈی پی میں اس کا حصہ 10.7فیصد ہے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد