ہر تقریر، ٹوئٹ سے پہلے وزیر اعظم کا دماغی معائنہ کرایا جائے، مریم اورنگزیب

  ہر تقریر، ٹوئٹ سے پہلے وزیر اعظم کا دماغی معائنہ کرایا جائے، مریم اورنگزیب

  



 اسلام آباد (این این آئی)پاکستان مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے وزیراعظم عمران خان کے بیان پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہر ٹویٹ اور تقریر سے پہلے عمران صاحب کا دماغی معائنہ لازمی قرار دیا جائے۔ ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ جھوٹے ٹویٹس اور خطاب، بائیس کروڑ عوام کے ملک کے ساتھ اس سے سنگین مذاق ہیں،جھوٹے معاشی اعشارئیے اور اعدادوشمار پیش کرکے عمران صاحب عوام کو اپنی طرح پاگل سمجھتے ہیں کیا؟،اصل معاشی اعشارئیے عوام کی دہائیاں، چیخیں اور جھولیاں اٹھااٹھاکر دی جانے والی بددعائیں ہیں۔ ترجمان نے کہاکہ اصل معاشی اعشارئیے یہ ہیں کہ پندرہ روپے کی روٹی اور بیس روپے کا نان ہے،عمران صاحب ذہنی عدم استحکام کا شکار ہیں۔ انہوں نے کہاکہ عمران خان اور ان کی حکومت کا کوئی وژن اور سمت نہیں، جھوٹ پہ ملک چلایاجارہا ہے،اسٹیٹ بنک کے مطابق 2020 میں بھی چودہ فیصد مہنگائی برقرار رہے گی،2020 میں بھی ترقی کی شرح دو سے اڑھائی فیصد رہے گی،سچ یہ ہے کہ نالائق حکومت نے ایک سال میں تاریخی 11 ہزار ارب کا قرض لیا،سچ یہ ہے کہ ایک سال میں گیس 200 فیصد اور بجلی 100 فیصد سے زائد مہنگی کی گئی،معاشی حقائق یہ ہیں کہ نالائق حکومت کے ایک سال میں فی کس آمدنی میں 11 فیصد کمی ہوچکی ہے،ایف بی آر نے برآمدکنندگان کے 75 ارب روپے کے ری فنڈ روک لئے،ری فنڈ روکنے کے باوجود ایف بی آر چار ماہ میں ریکارڈ167 ارب ٹیکس وصولی کے خسارے کا شکار ہے، اپنا ہدف پورا نہ کرسکا،مصنوعی طورپر فارن ایکسچینج ریزورز بڑھنے کی وجہ وہ سرمایہ ہے جو زیادہ شرح سود کی لالچ میں نفع کمانے والوں نے لگایا ہے،اسی بناء پر گروپس کی شکل میں سرمایہ کاری میں اضافہ ہوا کیونکہ زیادہ شرح سود کی وجہ سے غیرملکی بنکوں نے سرمایہ رکھوایا ہے۔

مریم اورنگزیب

مزید : پشاورصفحہ آخر