وفاقی کابینہ کا اجلاس ، زیادتی کے مجرمان کو کیا سزا دی جائے گی ؟ وفاقی کابینہ نے قانون لانے کی منظوری دیدی 

وفاقی کابینہ کا اجلاس ، زیادتی کے مجرمان کو کیا سزا دی جائے گی ؟ وفاقی کابینہ ...
وفاقی کابینہ کا اجلاس ، زیادتی کے مجرمان کو کیا سزا دی جائے گی ؟ وفاقی کابینہ نے قانون لانے کی منظوری دیدی 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )وفاقی کابینہ نے زیادتی کے مجرمان کیلئے کیسٹریشن کا قانون لانے کی منظوری دیدی ہے ۔

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس دوران زیادتی کے واقعات کی روک تھام کیلئے قانون سازی پر بحث کی گئی ، اجلاس میں مجرمان کی سخت سزاﺅں پر مشتمل سفارشات کی منظور ی دیدی گئی ہے جبکہ زیادتی کے مجرمان کیلئے کیسٹریشن کا قانون لانے کی بھی منظوری دیدی گئی ہے ۔

عمران خان نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سنگین نوعیت کا معاملہ ہے ، قانون سازی میں کسی قسم کی تاخیر نہیں کریں گے ، عوام کے تحفظ کیلئے واضح اورشفاف اندازمیں قانون سازی ہوگی، یقینی بنایا جائےگاکہ سخت سے سخت قانون کا اطلاق ہو۔

اجلاس میں کچھ وزراءنے زیادتی کے مجرمان کوپھانسی کی سزاقانون کاحصہ بنانے کامطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ زیادتی کے مجرمان کو سرعام پھانسی دی جائے ، فیصل واوڈا،اعظم سواتی اورنورالحق قادری نے بھی پھانسی کی حمایت کی ۔ اس موقع پر عمران خان نے رائے دیتے ہوئے کہا کہ ابتدائی طورپرکیسٹریشن کے قانون کی طرف جاناہوگا۔

وزیراعظم کا کہناتھا کہ قانونی ٹیم نے ریپ قانون آرڈیننس کے مسودہ پرکام مکمل کرلیا ہے ،خواتین پولیسنگ،فاسٹ ٹریک مقدمات ،گواہوں کاتحفظ بنیادی حصہ ہوگا، متاثرہ خواتین یابچے بلاخوف وخطراپنی شکایات درج کراسکیں گے، متاثرہ خواتین وبچوں کی شناخت کے تحفظ کاخیال رکھاجائےگا، ہم نے معاشرے کو محفوظ ماحول دینا ہے۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -