اینگرو ایشین والی بال چیمپئن شپ کے انعقاد کی تیاریاں مکمل

  اینگرو ایشین والی بال چیمپئن شپ کے انعقاد کی تیاریاں مکمل

  

 لاہور(پ ر)اینگرو ایشین والی بال چیمپیئن شپ کے لاہور میں انعقاد کی تمام تیاریاں مکمل، جاز کے تعاون سے منعقد ہونے والی چیمپیئن شپ میں میزبان پاکستان کے علاوہ ورلڈ نمبر 8 ایران، سری لنکا، بنگلہ دیش اور افغانستان کی ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں۔ اس بات کا اعلان پاکستان والی بال فیڈریشن کے چیئرمین چوہدری محمد یعقوب نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔ کہنا تھا کہ بھارتی ٹیم نے چیمپیئن شپ میں شرکت سے معذرت کر لی تھی جس کی بڑی وجہ ان کی حکومت نے انہیں اجازت نہیں دی تھی۔ 17 سال بعد پاکستان سنٹرل ایشین والی بال چیمپیئن شپ کی میزبانی کر رہا ہے جس کے شاندار مقابلے دیکھنے کو ملیں گے، ان کا کہنا تھا کہ چیمپیئن شپ کے آغاز سے قبل ہم نے اپنے آفیشلز کے لیے ٹریننگ پروگرام بھی ترتیب دیا تھا تاکہ وہ الیکٹرانک سسٹم کو سمجھ سکیں۔ ان کا کہنا تھا کہ سنٹرل ایشین والی بال چیمپیئن شپ سنگل لیگ کی بنیاد پر کھیلی جائے گی۔ ٹاپ دو ٹیموں کے درمیان فائنل میچ کھیلا جائیگا جبکہ تیسرے اور چوتھے نمبر پر رہنے والی ٹیموں کے درمیان تیسری پوزیشن کا میچ ہوگا۔ تینوں ٹیموں کو ٹرافی کے ساتھ ساتھ میڈلز بھی دیئے جائیں گے۔ پاکستان ٹیم نے بھی اس چیمپیئن شپ کے لیے بہترین تیاری کی ہے، اور اچھے نتائج دے گی۔کہنا تھا کہ پاکستان ٹیم آئندہ دو سال میں ایشیاء  وکٹری سٹینڈ پر ہو گی۔ اس وقت پاکستان ایشیا اوشیانا کے 65 ممالک میں ساتوین پوزیشن پر ہے۔ ہمارا ٹارگٹ 2028 اولمپک کے لئے کوالیفائی کرنا ہے۔ ہماری کوشش ہے کہ  ایشیا کے وکٹری سٹینڈ پر آئیں اور عالمی سطح کے لئے کوالیفائی کریں۔

، آئندہ دو تین سالوں میں ٹاپ 24ٹیموں میں شامل ہونگے۔ ہمارے پاس برازیل سے آئے ہوئے کوچ موجود ہیں۔ ہم مزید غیر ملکی کوچز کی مدد لے کر ایج گروپ کی ٹیمیں بنا کر اپنی بیس کو بڑھائیں گے، ہمارے پاس ٹیلنٹ موجود ہیں کوئی وجہ نہیں کہ ہم ٹاپ ٹیموں میں شامل نہ ہوں۔ اس موقع پر گروپ ڈائریکٹر ٹرانس گروپ راو عمر ہاشم کا کہنا تھا کہ ہمارا ادارہ ملک میں کھیلوں کے فروغ کے لیے سخت محنت کر رہا ہے۔ 2018ء  سے ملک میں والی بال کے فروغ کے لیے اپنے اقدامات کر رہے ہیں۔ ہمیں خوشی ہے کہ سنٹرل ایشین والی بال چیمپیئن شپ کے میچز کو بھی براہ راست عوام تک پہنچانے کی کوشش کر رہے ہیں تاکہ اس کھیل کو ہر سطح پر پہنچایا جا سکے۔ ان کا کہنا تھا کہ چیمپیئن شپ کے میچز کو دکھانے کے لیے ہم نے جیو سپر کی خدمات حاصل ہیں۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -