جام پور،میونسپل کمیٹی افسروں کی ملی بھگت سے بغیر نقشہ عمارتیں تعمیر

  جام پور،میونسپل کمیٹی افسروں کی ملی بھگت سے بغیر نقشہ عمارتیں تعمیر

  

جام پور(نامہ نگار) میونسپل کمیٹی جام پور افسران کی مبینہ سرپرستی میں (بقیہ نمبر13صفحہ6پر)

 اندرون شہر و دیگر شہروں میں بغیر نقشہ جات تعمیرات جاری ہے باوثوق ذرائع سے یہ بھی معلوم ہوا کہ دوکان مکان  مالکان نقشہ کی مد میں پیسہ بچانے کے چکر میں میونسپل کمیٹی کے چند اہلکاران کو کچھ رقم منہ میں دے کر سب اوکے کرا لیتے ہیں جس پر حکومت پنجاب کو ھر ماہ لاکھوں کروڑوں کا رگڑا لگایا جا رہا ہے یہاں پر کوئی پرسان حال نہیں زرائع یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ نیو سبزی منڈی جامپور کے آگے پیچھے اور مین روڈ پر جتنی بھی دوکانیں تعمیر کی گئی ہیں سب کی سب نان رجسٹرڈ اور بغیر نقشہ کے تعمیر کی گئیں ہیں وہ بھی ناقص میٹیریل کے ساتھ جو اس وقت جھولنے لگی ہیں کسی وقت بھی نیچے دھڑم ہو سکتی ہیں اور جانی نقصان کا بھی خطرہ ہے شہریوں شاہزیب اقبال،ملک بہاول،سید عمران شاہ،ملک محسن،ملک انس،غلام اکبر،محمد طارق،غلام شبیر،سچل بہزاد جنید اقبال،و دیگر شہریوں نے کمشنر ڈیرہ غازی خان اور ڈپٹی کمشنر راجن پور سے پرزور مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت پنجاب کو نقصان پہنچانے والے میونسپل اہلکاران کے ساتھ ساتھ مارکیٹ مالکان کے خلاف بھی گھیرا تنگ کیا جائے تاکہ آئندہ کوئی بھی شخص پنجاب حکومت کو کروڑوں روپے مالیت کا دینے کا سوچ بھی نا سکے ان لوگوں کے خلاف سخت سے سخت کارروائی عمل میں لائی جائے،،،

مزید :

ملتان صفحہ آخر -