پاک فوج کے نئے سپہ سالا رحافظ قرآن 

پاک فوج کے نئے سپہ سالا رحافظ قرآن 
پاک فوج کے نئے سپہ سالا رحافظ قرآن 

  

راولپنڈی (ڈیلی پاکستان آن لائن )وزیراعظم شہبازشریف نے جنرل عاصم منیر کو آرمی چیف مقرر کر دیاہے جس کی سمری منظوری کیلئے صدر مملکت عارف علوی کو بھجوا دی ہے جن کی منظوری کے بعد ان کی تعیناتی ہو جائے گی ۔

تفصیلات کے مطابق جنرل عاصم منیر کی فوجی خدمات کسی سے ڈھکی چھپی نہیں بلکہ آپ کو یہ جان کر بے حدخوشی ہو گی کہ وہ حافظ قرآن بھی ہیں ۔جنرل عاصم منیر جب بطور لیفٹیننٹ کرنل سعودی عرب میں تعینات تھے تو اس دوران انہوں نے قرآن پاک بھی حفظ کیا اور یوں وہ حافظ قرآن بھی ہیں ۔جنرل عاصم منیر سینیارٹی میں سب سے اوپر ہیں ۔

انہوں نے آفیسرز ٹریننگ سکول منگلہ میں خود کو بہترین ثابت کرتے ہوئے ” سوارڈ آف آنر “  حاصل کی جبکہ بہادری اور خدمات پر انہیں تمغہ ہلال امتیاز سے بھی نوازا گیا ۔لیفٹیننٹ جنرل عاصم منیر پہلے آرمی چیف ہیں جو پاکستان ملٹری اکیڈمی لانگ کورس سے نہیں بلکہ او ٹی ایس کمیشنڈ آفیسر ہوں گے۔جنرل عاصم منیر آفیسر منگلا میں ٹریننگ سکول سے پاس آو¿ٹ ہوئے اور فوج میں فرنٹئیر فورس رجمنٹ میں کمیشن حاصل کیا۔آرمی میں او ٹی ایس پروگرام 1989 کے بعد ختم کر دیا گیا تھا اور 1990 میں آفیسر ٹریننگ سکول کو جونئیر کیڈٹ اکیڈمی کا درجہ دیا گیا۔

جنرل عاصم منیر نے جنرل باجوہ کے ماتحت بریگیڈیئر کے طور پر فورس کمانڈ ناردرن ایریاز میں فوج کی کمان سنبھالی جب جنرل قمر جاوید باجوہ کمانڈر ٹین کور (راولپنڈی) تھے۔جنرل عاصم منیر کو 2017 کے اوائل میں ڈی جی ملٹری انٹیلیجنس مقرر کیا گیا اور اگلے سال اکتوبر میں آئی ایس آئی کا سربراہ بنا دیا گیا۔ تاہم اعلیٰ انٹیلی جنس افسر کے طور پر ان کا اس عہدے پر قیام مختصر مدت کے لیے رہا اور آٹھ ماہ کے اندر ان کی جگہ لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید کا تقرر عمل میں آیا۔اس کے بعد جنرل عاصم منیر کو کور کمانڈر گوجرانوالہ تعینات کیا گیا، جہاں وہ دو سال گزارنے کے بعد جی ایچ کیو میں کوارٹر ماسٹر جنرل کے عہدے پر تعینات ہوئے۔

مزید :

قومی -