’فاٹایونیورسٹی“ کا پہلا بیچ مکمل ،کسی خاتون طالبہ نے داخلہ نہیں لیا

’فاٹایونیورسٹی“ کا پہلا بیچ مکمل ،کسی خاتون طالبہ نے داخلہ نہیں لیا
’فاٹایونیورسٹی“ کا پہلا بیچ مکمل ،کسی خاتون طالبہ نے داخلہ نہیں لیا

  

درہ آدم خیل(ویب ڈیسک)حکومت پاکستان کی جانب سے فاٹا کے رہائشیوں کے لیے حال ہی قائم کی گئی ’فاٹایونیورسٹی“ کے پہلے بیچ میں ایک بھی لڑکی نے داخلہ نہیں لیا۔

روزنامہ جنگ کے مطابق یونیورسٹی کے وائس چانسلرطاہر شاہ نے بتایا کہ قبائلی علاقوں کے نوجوان فاٹا میں یونیورسٹی کے قیام کے لیے مطالبہ کررتے رہے ہیں اور درہ آدم خیل میں یونیورسٹی کے قیام سے انکی دیرینہ اپیل پوری کردی گئی ہے، تاہم اگلے ہفتے سے شروع ہونے والے یونیورسٹی کے پہلے بیچ میں کوئی خاتون شامل نہیں، رواں سال جامعہ میں داخلے کے لیے کسی طالبہ نے رجوع نہیں کیا ، جامعہ کی پہلی جماعت 84 طلبہ پر مشتمل ہے،انہوں نے امید ظاہر کی ایک بار جامعہ کامیاب ثابت ہوجائے، خواتین کی جانب سے بھی جامعہ میں داخلے کا حصول شروع ہوجائےگا۔

مزید :

قومی -