زرعی قرضہ جات کے حصول کیلئے رجسٹریشن کی تاریخ میں توسیع کر دی گئی

زرعی قرضہ جات کے حصول کیلئے رجسٹریشن کی تاریخ میں توسیع کر دی گئی

  

راولپنڈی(اے پی پی )محکمہ زراعت پنجاب نے وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی ہدایت پر100 ارب روپے کے زرعی قرضوں کے حصول کے لئے رجسٹریشن کی تاریخ میں 15 نومبر تک توسیع کر دی ۔زرعی ترجمان کے مطابق پنجاب میں ساڑھے 12 ایکڑ تک زرعی اراضی کے 5 لاکھ مالکان و مزارعین کو بلاسود قرضوں کی فراہمی کی سود کی رقم پنجاب حکومت ادا کرے گی۔ پاکستان میں قائم مختلف بینکوں اور مالیاتی اداروں بالخصوص زرعی ترقیاتی بینک، نیشنل بینک آف پاکستان، تعمیر بینک، نیشنل رورل سپورٹس پروگرام اور اخوت بینک کاشتکاروں کو بلا سود قرضے فراہم کر رہے ہیں ۔پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ اور پنجاب لینڈ ریکارڈ مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم آف ریونیو کی مدد سے صوبہ بھر میں قائم 143 تحصیل اراضی ریکارڈ سنٹرز پر کاشتکاروں کی رجسٹریشن کے بعد ٹوکن جاری کئے جا رہے ہیں۔ کاشتکاروں کی رجسٹریشن کے عمل کو نہایت سادہ بنایا گیا ہے اور ان کو اگلے پانچ سال کے دوران ربیع اور خریف سیزن میں بالترتیب 25000/- روپے اور 40000/- روپے فی ایکڑ کے حساب سے تین اقساط میں قرضہ جاری کیا جائے گا اور زیادہ سے زیادہ 5 ایکڑ تک زرعی قرضہ دیا جائے گا۔ ٹوکن کے اجراء کے بعد کاشتکاروں کو 110 روپے میں سمارٹ فون مہیا کئے جائیں گے جس کے لئے حکومت پنجاب 2 ارب روپے مختص کئے ہیں۔

مزید :

کامرس -