عوامی خدمات پر وزیر اعظم کی طرف ایوارڈ پانے والے کو دہشت گرد قرار دینا باعث افسوس ہے

عوامی خدمات پر وزیر اعظم کی طرف ایوارڈ پانے والے کو دہشت گرد قرار دینا باعث ...

  

پار چنار ( نمائندہ پاکستان ) کرم ایجنسی کے قبائلی عمائدین نیکہا ہے کہ علامہ شیخ محسن کا پاکستانی شہریت منسوخ کرنا اور دھشت گرد قرار دینا قابل مذمت ہے اس لئے حکومت اپنا فیصلہ واپس لیں اور عوام کو سڑکوں پر لانے پر مجبورنہ کریں۔پاراچنار میں مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے قبائلی رہنما حاجی عون علی ، حاجی سجاد حسین ، حاجی سلطان علی ، حاجی حمید اور الکوثر ٹرسٹ کے رہنماوں واحد علی ، سید ابراہیم اور دیگر رہنماوں نے کہا کہ علامہ شیخ محسن کے خلاف حکومتی اقدامات قابل مذمت ہے علامہ شیخ محسن نے زلزلہ متاثرین کی جس طرح امداد کی ہے ہسپتال ، سکولز ، کالجز ، مسجد اور دیگر سینکڑوں ادارے بنائے جس پر وزیر اعظم نے انہیں ایوارڈ بھی دیا اس کے باوجود علامہ شیخ محسن کے اثاثے منجمد کرنا اور انہیں دھشت گرد قرار دینا افسوس ناک اقدام ہے۔ حکومت فوری طور پر اپنا فیصلہ واپس لیں اور عوامی تشویش اور غلط فیصلے کو مدنظر رکھتے ہوئے ان کی شہریت بحال کی جائے اور انہیں ایک امن پسند شہری قرار دیا جائے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -