ضلعی انتطامیہ ملتان کو پھاٹا کالونیوں میں کمرشلائزیشن فیص وصولی سے روک دیا گیا

ضلعی انتطامیہ ملتان کو پھاٹا کالونیوں میں کمرشلائزیشن فیص وصولی سے روک دیا ...

  

ملتان(ملک اعظم سے ) صوبائی سیکرٹری ہاؤسنگ نے ضلعی انتظامیہ ملتان کو پھاٹا کالونیوں میں کمرشلائزیشن کے اختیارات دینے سے انکار کر دیا اور سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ کو ضلع ملتان میں واقع پھاٹا کی کالونیوں میں کمرشلائزیشن فیس وصول کرنے سے روک دیا سیکرٹری ہاؤسنگ کے احکامات کے بعد ڈی سی او ملتان نے ضلع بھر کی پھاٹا کالونیوں میں کمرشلائزیشن کے حوالے سے جاری کردہ لیٹر سرنڈر کر لیا بتایا جاتا ہے راولپنڈی ، فیصل آباد اور لاہور میں پھاٹا کالونیوں میں رہائشی پلاٹس کو کمرشل کرنے کے اختیارات سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ کے پاس ہیں مذکورہ اضلاع کی ضلعی انتظامیہ اس اختیار کے ذریعہ کروڑوں روپے کا ریونیو وصول کر چکی ہے ڈی سی او ملتان نادر چٹھہ نے اس پیٹرن کی طرف پر گذشتہ دنوں ایک مراسلہ جاری کیا جس کے تحت پھاٹا کالونیوں میں کمرشلائزیشن کے اختیارات متعلقہ ٹاؤنز کو سونپ دیے اس مراسلہ کے جاری ہونے کے بعد گلگشت، نیوملتان اور دیگر کالونیوں سے کمرشلائزیشن کے کیسز سامنے آنے لگے ہر متعلقہ ٹاؤن نے ان درخواستوں پر قانون کیمطابق کارروائی شروع کردی معلوم ہوا ہے صرف گلگشت سے سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ کو کروڑوں روپے کا ریونیو حاصل ہونے کی امید تھی لیکن سیکرٹری ہاؤسنگ نے ڈی سی او ملتان کی اس کاوش کو ناکام بنا دیا اور ڈی سی او ملتان کے جاری کردہ لیٹر کو قبول کرنے سے انکار کرتے ہوئے پھاٹا کالونیوں میں کمرشلائزیشن کی اجازت دینے سے انکار کر دیا اور مؤقف اختیار کیا پھاٹا کالونیوں میں رہائشی پلاٹس کو کمرشلائز نہیں کیا جاسکتا سیکرٹری ہاؤسنگ کا یہ لیٹر زمینی حقائق کی یکسر منافی ہے کیونکہ ملتان میں پھاٹا کی کالونیوں میں سینکڑوں رہائشی پلاٹس کمرشل مارکیٹ میں تبدیل ہوچکے ہیں اور وقت گزرنے کے ساتھ ان کی تعداد میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے پھاٹا کے افسران کمرشلائزیشن کو روکنے میں بری طرح ناکام نظر آتے ہیں مک مکا کے سنہری اصول پر عمل کرتے ہوئے غیر قانونی کاموں کی حوصلہ افزائی کر رہے ہیں صورتحال اس نہج تک پہنچ چکی ہے کہ تعلیمی مقاصد کیلئے وقف اراضی پر بھی کمرشل مارکیٹس بن گئی ہیں لیکن حکومتی خزانہ میں کمرشلائزیشن کی فیس کی مد میں ایک روپیہ جمع نہیں کرایا گیا اس صورتحال میں ڈی سی او ملتان کی جانب سے ایک مثبت قدم اٹھایا گیا تاکہ ان تمام غیر قانونی کمرشل مارکیٹس کو قانون کے دائرہ میں لا کر کروڑوں روپے کا ریونیو حاصل کیا جا سکے لیکن سیکرٹری ریونیو نے اس کوشش کو ناکام بنا دیا سیکرٹری ہاؤسنگ کے ان احکامات کے ساتھ سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ کا کروڑون روپے کا ریونیو اکٹھا کرنے کا منصوبہ خاک میں مل گیا۔

پھاٹا

مزید :

ملتان صفحہ اول -