نیو یارک ٹائمز کی سعودی خواتین کی آواز بننے کی کوشش، سعودی عورتوں نے اخبار کو کرارا جواب دےدیا

نیو یارک ٹائمز کی سعودی خواتین کی آواز بننے کی کوشش، سعودی عورتوں نے اخبار ...
نیو یارک ٹائمز کی سعودی خواتین کی آواز بننے کی کوشش، سعودی عورتوں نے اخبار کو کرارا جواب دےدیا

  

مدینہ منور  (بیور ورپورٹ) سعودی عرب کی خواتین نے امریکی اخبار نیو یارک ٹائمز کو ان کے معاملات میں دخل اندازی سے گریز کرنے کا مشورہ دیتے ہوئے اپنے کام سے کام رکھنے کا کہہ دیا ۔

 مشہور امریکی اخبار نیویارک ٹائمز نے اپنے اخبار میں سعودی عورتوں سے ایک سوال کیا۔جس میں کہا گیا کہ چونکہ سعودی عورتوں نے حال ہی میں ووٹنگ میں حصہ لیالیکن اس کے باوجود سعودی عورتیں ابھی بھی بہت سے کام نہیں کرسکتیں۔وہ ڈرائیونگ نہیں کرسکتیں، اپنے ولی کی اجازت کے بغیر کوئی کام نہیں کرسکتیں۔اس لیے نیویارک ٹائمز سعودی عورتوں کو موقع دیتا ہے کہ وہ اپنے مسائل ،سعودی معاشرے کا عورتوں کے ساتھ رویہ،  اور اس بارے میں اپنی آرا ان سے شئیر کریں۔  نیویارک ٹائمز ان کے مسائل لوگوں کے سامنے رکھے گا اور ایسی خواتین کی آواز دنیا میں بلند کرے گا۔

عمران خان کا طاہر القادری کو ٹیلیفون ،دھرنے میں شرکت کی دعوت قبول کر لی

نیویارک ٹائمز کے اس سوال پر سعودی عورتوں نے کیا جواب دیاآپ پڑھ کر حیران رہ جائیں گے۔سعودی عورتوں کا نیویارک ٹائمز کو کہنا تھا کہ آپ ہمارے معاملات میں دخل اندازی نہ کرو۔ہم الحمدللہ ہمیشہ سے خوش ہیں۔سعودی عورتیں اچھی طرح جانتی ہیں کہ نیویارک ٹائمز کی اس نئی بحث کے پیچھے کیا خباثت چھپی ہے۔

یاد رہے حال ہی میں ٹوئٹرپر سعودی عورتوں کو ڈرائیونگ اور ولی کی اجازت کے بغیر شادی کرنے کے سلسلے میں ٹوئٹر پر ٹرینڈ بنا کر خوب پروپیگنڈہ کیا گیا تھا جسے سعودی شہریوں نے رد کردیا تھا۔

مزید :

عرب دنیا -