کوئٹہ میں پولیس ٹریننگ سینٹر پر خودکش حملے، 61اہلکار شہید ، 120زخمی

کوئٹہ میں پولیس ٹریننگ سینٹر پر خودکش حملے، 61اہلکار شہید ، 120زخمی
کوئٹہ میں پولیس ٹریننگ سینٹر پر خودکش حملے، 61اہلکار شہید ، 120زخمی

  

کوئٹہ (ما نیٹرنگ ڈیسک ) سریا ب میں پولیس ٹریننگ سینٹر پر خودکش حملوں کے نتیجے میں کیپٹن سمیت 61اپولیس ہلکار شہید اور5 فوجی جوانوں سمیت 120زخمی ہو گئے۔آئی جی ایف سی کا کہنا ہے کہ دہشتگردوں کا تعلق لشکر جھنگوی العالمی سے تھا جو افغانستان سے ہدایات لے رہے تھے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق کوئٹہ میں سریاب پولیس ٹریننگ سینٹر پر3 دہشتگردوں نے حملہ کر دیا ، دو خودکش دھماکوں میں فوجی افسر سمیت زیر تربیت 61پولیس اہلکار شہید ہو گئے جبکہ فوجیوں سمیت 120کے قریب زخمی ہیں جنہیں بولان میڈیکل کمپلیکس اور سول ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔دہشت گردوں نے دو سو سے زائد اہلکاروں کو یرغمال بھی بنائے رکھا جنہیں بازیا ب کر الیا گیا ہے ۔ کیپٹن روح اللہ کلیئرنس آپریشن کے دوران شہید ہوئے ۔

ٹریننگ سینٹر میں 700کے قریب اہلکار زیر تربیت تھے تاہم حادثے کے بعد صوبے بھر کے ایئر پورٹس اور دیگر اہم مقامات کی سیکیورٹی سخت کر دی گئی ہے۔شہید ہونے والے اہلکاروں میں 11کا تعلق پنجگور جبکہ 7کیڈٹس کا تعلق قلعہ عبداللہ سے ہے ۔اس کے علاوہ تربت کے 20کیڈٹس جبکہ پشین ، ڈیرہ بگٹی ، گوادر ، مستونگ ، خضدار اور لورالائی سے تعلق رکھنے والے اہلکار بھی شہید ہوئے ہیںتاہم تما م شہید اہلکاروں کی نماز جنازہ پولیس لائنز میں ادا کر دی گئی ہے ۔

وزیر داخلہ بلوچستان سرفراز بگٹی نے جائے حادثہ کا دورہ کرنے کے بعد میڈیا کو بتایا کہ  تین خودکش حملہ آور رات 11بجکر 10منٹ پر ٹریننگ سینٹر میں داخل ہوئے جنہوں نے پہلے واچ ٹاور پر موجود گارڈ کو شہید کیا اور بعد میں فائرنگ کرتے ہوئے کمپاﺅنڈ میں داخل ہو گئے تاہم فورسز کی جوابی فائرنگ سے ایک خودکش حملہ آور کو ہلاک کر دیا گیا جبکہ دیگر 2دہشتگردوں نے ہاسٹل کے اندر جا کر خود کو اڑا لیا جس سے شہادتیں ہوئیں اور اہلکار زخمی بھی ہوئے ۔

انہوں نے کہا کہ حملے میں بیس اہلکار شہید اور 65زخمی ہوئے تاہم فورسز نے چار گھنٹے کی کوشش کے بعد آپریشن مکمل کر لیا ہے اور 200سے زائد یرغمالیوں کو بازیاب کر الیا گیا ہے ۔حملے کی ذمہ داری کالعدم لشکر جھنگوی العالمی نے قبول کر لی ہے ۔واقعے کے بعد ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کر دی گئی ہے ۔

آئی جی ایف سی شیر افگن کا کہنا ہے کہ حملہ آوروں کو افغانستان سے ہدایات مل رہی تھی تاہم فورسز نے بہادری سے حملہ آوروں کا مقابلہ کیا، آپریشن میں ایف سی ، فوج اور پولیس نے حصہ لیا ۔آپریشن کی نگرانی ہیلی کاپٹر سے بھی کی جاتی رہی۔

انہوں نے مزید کیا کہ حملے کی اطلاع کے بعد فوری طور پر کارروائی کی گئی ، حملہ لشکر جھنگوی العالمی کے دہشت گردوں نے کیاتاہم  پولیس ٹریننگ سینٹر کو کلیئر کر دیا گیا ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ 250سے زائد اہلکاروں کو باحفاظت ہاسٹل سے نکال لیا گیا ہے ۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ دہشت گردوں نے ٹریننگ سینٹر پر اس وقت حملہ کیا جب اہلکار سونے کی تیاری کر رہے تھے ، حملہ آوروں نے اندر داخل ہوتے ہی اندھا دھند فائرنگ کر دی جس سے اہلکاروں کو سنبھلنے کا موقع نہیں ملا ۔

آپریشن مکمل ہونے کے بعد ٹریننگ سینٹر کے گرد علاقوں میں فوج اور ایف سی کی بھاری نفری تعینات ہے اور علاقے کو سیل کر دیا گیا ہے ۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -